آرمی چیف نے چار شدت پسندوں کے ڈیتھ وارنٹس پر دستخط کر دیے

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

پاکستانی فوج کے شعبۂ تعلقاتِ عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق فوج کے سپہ سالار جنرل راحیل شریف نے چار شدت پسندوں کے ڈیتھ وارنٹس پر دستخط کر دیے ہیں۔

آئی ایس پی آر کے منگل کو جاری ہونے والے بیان کے مطابق جنرل راحیل شریف نے قتل و غارت، خود کش دھماکوں، اغوا برائے تاوان اور دہشت گرد تنظیموں کو مالی معاونت فراہم کرنے والے چار شدت پسندوں کے ڈیتھ وارنٹس پر دستخط کیے۔

’آرمی چیف نے چھ شدت پسندوں کے ڈیتھ وارنٹ پر دستخط کر دیے‘

پاکستان کی بری فوج کے سپہ سالار جنرل راحیل شریف نے جس شدت پسندوں کے ڈیتھ وارنٹس پر دستخط کیے ان کے نام یہ ہیں:

1. نور سعید عرف حافظ صاحب

2. مراد خان

3. عنایت اللہ

4. اسرار الدین

واضح رہے کہ وزیرِ اعظم نواز شریف نے گذشتہ برس 16 دسمبر کو پشاور کے آرمی پبلک سکول پر طالبان شدت پسندوں کے حملے میں132 بچوں سمیت 141 افراد کی ہلاکت کے بعد سزائے موت پر عمل درآمد کی بحالی کا اعلان کیا تھا۔

ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان کے پاس موجود اعداد و شمار کے مطابق پاکستان کی جیلوں میں اس وقت ساڑھے آٹھ ہزار کے قریب ایسے قیدی ہیں جنھیں موت کی سزا سنائی جا چکی ہے اور ان کی تمام اپیلیں مسترد ہو چکی ہیں۔

تاہم ایک غیر سرکاری تنظیم جسٹس پراجیکٹ پاکستان کی جانب سے حال ہی میں جاری ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ان مجرموں میں سے دس سے 12 فیصد قیدی ایسے ہیں جنھیں انسدادِ دہشت گردی ایکٹ کے تحت سزائے موت سنائی گئی ہے۔

اسی بارے میں