پاکستان، افغانستان ڈی جی ایم اوز کا ہاٹ لائن پر رابطہ

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ پاکستان اور افغانستان کے ڈائریکٹر جنرل ملڑی آپریشنز (ڈی جی ایم اوز) کے درمیان ہاٹ لائن قائم کر دی گئی ہے۔

عاصم سلیم باجوہ نے ٹوئٹر پر جاری کردہ بیان میں کہا کہ بدھ کو اس سلسلے میں دونوں ممالک کے ڈی جی ایم او نے پہلی بار رابطہ کیا جس میں عسکری معاملات، دونوں جانب کے کور کمانڈروں کی مجوزہ ملاقاتوں کی تاریخ اور سرحد کے دونوں جانب تعاون کو مزید بڑھانے کے لیے اقدامات پر بات چیت کی گئی۔

جنرل راحیل شریف کابل پہنچ گئے

راحیل شریف اتوار کو کابل جائیں گے

’افغانستان میں امن، مصالحت کے لیے سازگار ماحول کی ضرورت‘

عاصم باجوہ کے مطابق دونوں ممالک کے درمیان یہ ہاٹ لائن قائم کرنےکا فیصلہ جنرل راحیل شریف کے 27 دسمبر کے دورۂ کابل کے دوران کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ افغان حکومت اور طالبان کے درمیان براہ راست مذاکرات پہلی مرتبہ اس سال جولائی میں پاکستان کی میزبانی میں اسلام آباد کے قریب سیاحتی مرکز مری میں منعقد ہوئے تھے۔

لیکن مذاکرات کا یہ سلسلہ طالبان کے رہنما ملا محمد عمر کی پاکستان کے ایک ہسپتال میں طبعی موت واقع ہونے کی خبر سے تعطل کا شکار ہو گیا تھا۔

اسلام آباد میں اس ماہ کے شروع میں منعقد ہونے والے ’ہارٹ آف ایشیا‘ کانفرنس میں افغانستان کے صدر اشرف غنی نے شرکت کی تھی۔ ان کے علاوہ اس کانفرنس میں بھارت کی وزیر خارجہ سمشا سوراج ، امریکہ اور چین کے نمائندے بھی موجود تھے۔

اسی بارے میں