پاکستان کا ریڈار پر نہ آنے والے کروز میزائل کا کامیاب تجربہ

تصویر کے کاپی رائٹ ISPR
Image caption یہ میزائل سمیت معلوم کرنے اور گائیڈنس کے جدید سسٹم سے لیس ہے اور درست انداز میں اپنے ہدف کو نشانہ بناسکتا ہے

پاکستان نے منگل کو 350 کلومیٹر تک اپنے ہدف کو نشانہ بنانے والے کروز میزائل رعد کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔

فوج کے محکمہ تعلقاتِ عامہ کی جانب سے منگل کو ایک بیان میں بتایا گیا کہ یہ کروز میزائل جدید نظام اور نیویگیشن کے ساتھ منسلک ہے جس کے سبب زمین اور سمندر میں اپنے ہدف کو کامیابی سے نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

پاکستانی میزائل بھارت کے لیے مخصوص

پاکستان کا سٹیلتھ ٹیکنالوجی کے حامل کروز میزائل کا کامیاب تجربہ

پاکستان میں تیار کیے جانے والا کروز میزائل رعد جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ ہے جس کے باعث ریڈار اس کا سراغ نہیں لگا سکتا۔

نشاندہی سے بچنے کے لیے میزائل انتہائی نچلی پرواز کے ساتھ ہدف تک پہنچ سکتا ہے۔

کروز ٹیکنالوجی انتہائی پیچیدہ ہے جو دنیا کے چند ممالک کے پاس ہی موجود ہے۔

میزائل کے کامیاب تجربے پر وزیر اعظم اور صدر نے سائنسدانوں اور انجینئرز کو مبارک باد دی۔

سٹرٹیجک پلانز ڈویژن کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل مظہر جمیل نے اس کامیاب تجربے کو بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے پاکستان کی دفاعی صلاحیت کو تقویت ملے گی۔

اسی بارے میں