پاکستان میں حالیہ بارشوں کے باعث 18 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ epa
Image caption پی ڈی ایم اے کے مطابق بارشوں کی وجہ سے مجموعی طور پر 50 سے زائد گھروں کو نقصان پہنچا ہے (فائل فوٹو)

پاکستان میں جاری حالیہ بارشوں کے باعث ملک کے مختلف علاقوں میں ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 18 ہو گئی ہے جبکہ متعداد افراد زخمی ہوئے ہیں۔

قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے پی ڈی ایم اےکے مطابق بارشوں کے باعث صوبہ بلوچستان میں 17 جبکہ ضلع ٹانک میں ایک شخص ہلاک ہوا ہے۔

ادارے کے مطابق ضلع ٹانک میں کمرے کی چھت گرنے سے دو بچوں سمیت تین افراد زخمی ہوئے ہیں۔

دوسری جانب ریسکیو 1122 کے ترجمان کے مطابق خیبر پختونخوا کے علاقے مردان میں ایک عمارت گرنے سے چار افراد زخمی ہوئے ہیں۔

اس سے قبل بی بی سی کے نامہ نگار محمد کاظم نے بتایا تھا کہ بلوچستان میں ہلاک ہونے والے 17 افراد میں سے پانچ افراد کی ہلاکت کا واقعہ جمعے اور سینیچر کی درمیانی شب کوئٹہ شہر سے 50کلومیٹر دور پشین میں پیش آیا تھا۔

پشین میں لیویز فورس کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا تھا کہ کلی حاجی زئی میں بارش کے باعث ایک گھر کی چھت گر گئی۔ چھت گرنے کی وجہ سے ایک ہی خاندان کے پانچ افراد ہلاک اور تین زخمی ہوئے۔ ہلاک ہونے والوں میں تین مرد ، ایک خاتون اور ایک بچی شامل تھی۔

اس سے قبل بارشوں سے پانچ افراد وزیرستان سے متصل بلوچستان کے ضلع شیرانی میں ہلاک ہوئے تھے۔

قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے پی ڈی ایم اے کے ذرائع کے مطابق ضلع کے علاقے شنہ پونگا میں زیادہ بارشوں کی وجہ سے ایک گھرکی چھت گر گئی۔

قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے کے مطابق بلوچستان میں مزید دو سے تین روز تک تیز بارشوں کا امکان ہے۔

بارشوں کے نتیجے میں سیلاب کا بھی خطرہ ہے۔اس صورتحال کے پیش نظر لوگوں کو کہا گیا ہے کہ وہ محتاط رہیں اور برساتی نالوں کے قرب و جوار کے علاقوں سے دور رہیں۔

پی ڈی ایم کے ذرائع کے مطابق بلوچستان کے جن علاقوں میں گھروں کو نقصان پہنچا ہے وہاں امدادی اشیا بھیج دی گئی ہیں۔

ان ذرائع کے مطابق جن 20 اضلاع میں سیلاب کا زیادہ خطرہ تھا وہاں کے ڈپٹی کمشنروں کو ہنگامی ریلیف کے لیے 50، 50 لاکھ روپے جاری کردیے گئے ہیں۔

اسی بارے میں