مینگورہ میں فائرنگ، قائم مقام ڈی ایس پی ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ bb
Image caption محمد الیاس بنیادی طور پر ضلع شانگلہ میں سب انسپکٹر لیگل تھے لیکن انھیں ان دنوں ڈی ایس پی لیگل کا چارج بھی دیا گیا تھا (فائل فوٹو)

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع سوات میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے شانگلہ سے آئے ہوئے قائم مقام ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس کو ہلاک کر دیا ہے۔ گذشتہ روز جنوبی ضلع لکی مروت میں دو پولیس اہلکاروں کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

سوات سے پولیس اہلکار نے بتایا کہ محمد الیاس پر حملہ پیپلز چوک پر کیا گیا ہے۔ یہ تھانہ مینگورہ کا علاقہ ہے۔ پولیس کے مطابق حملہ آور فائرنگ کے بعد موقع سے فرار ہو گئے ہیں۔

ایسی اطلاعات ہیں کہ محمد الیاس بنیادی طور پر ضلع شانگلہ میں سب انسپکٹر لیگل تھے لیکن انھیں ان دنوں ڈی ایس پی لیگل کا چارج بھی دیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق انھیں گزشتہ روز سوات میں ایک ٹریننگ کورس کے لیے لیکچر دینے کے لیے مدعو کیا گیا تھا۔ انھوں نے پیر کو دوپہر کے وقت پولیس ٹریننگ سکول میں لیکچر دیا تھا۔

محمد الیاس کو اکثر و بیشتر ایڈوانس کورسز میں شریک اہلکاروں کو لیکچر کے لیے بلایا جاتا تھا ۔

محمد الیاس کو نشانہ بنانے کی ذمہ داری کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے قبول کی ہے۔

خیبر پختونخوا میں کچھ عرصے سے ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں خطرناک حد تک اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ گذشتہ روز جنوبی ضلع لکی مروت میں ضلعی سیکیورٹی برانچ کے اہلکار طارق عثمان اور سپشل برانچ کے اہلکار مشال خان تحصیل نورنگ سے موٹر سائیکل پر گنڈی چوک کی جانب آ رہے تھے کہ راستے میں ان پر حملہ کیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption خیبر پختونخوا میں کچھ عرصے سے ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں خطرناک حد تک اضافہ دیکھا جا رہا ہے

لکی مروت سے پولیس اہلکاروں نے بتایا کہ دونوں اہلکار معمول کی ڈیوٹی پر تھے کہ ان پر موٹر سائیکل پر سوار حملہ آوروں نے فائرنگ کی اور موقع سے فرار ہو گئے ہیں۔

لکی مروت میں دس دنوں کے اندر چار پولیس اہلکاروں کو فائرنگ کرکے ہلاک کیا گیا ہے ۔ اس مہینے کی چار تاریخ کو نا معلوم افراد نے لکی مروت شہر کے اندر امام بارگاہ کے سامنے ایک پولیس اہلکار کو فائرنگ کرکے قتل کر دیا گیا تھا جبکہ اس کے بعد آٹھ اپریل کونورنگ میں لڑکوں کے ڈگری کالج کے سامنے ایک اہلکار کو قتل کر دیا گیا تھا۔ ان دونوں اہلکاروں کا تعلق فرنٹیئر ریزرو پولیس سے بتایا گیا ہے ۔

یہاں یہ امر قابل زکر ہے کہ نورنگ میں گذشتہ ماہ کے وسط میں ایک ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس اپنے گھر میں مردہ پائے گئے تھے۔ ان کی کن پٹی پر گولی کا نشان تھا لیکن اب تک یہ واضح نہیں ہو سکا کہ انھیں قتل کیا گیا تھا یا کوئی اور وجہ تھی۔

اسی بارے میں