خضدار میں ٹریفک حادثہ، 12 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان میں سڑکوں پر قانون کی خلاف ورزی اور لاپرواہی کی وجہ سے حادثات معمول ہیں

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع خضدار میں ٹریفک حادثے میں کم از کم 12افراد ہلاک اور 20 سے زخمی ہوگئے۔

خضدار میں لیویز فورس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ حادثہ ضلع کے علاقے پیر عمر کے علاقے میں پیش آیا۔

لیویز فورس کے اہلکار کا کہنا تھا کہ ایک مسافر بس کوئٹہ سے کراچی کی جانب جا رہی تھی اور جب بس پیر عمر کے علاقے میں پہنچی تو وہ بے قابو ہوکر ایک پل سے نیچے جا گری۔

اہلکار کا کہنا تھا کہ حادثے کے بارے میں تحقیقات جاری ہیں۔

زخمیوں کو طبی امداد کے لیے قریبی ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں بعض کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

کوئٹہ اور کراچی کے درمیان آر سی ڈی ہائی وے نہ صرف دونوں شہروں بلکہ بلوچستان کے سندھ سے رابطے کا ایک اہم زمینی راستہ ہے۔

روزانہ اس شاہراہ پر بلوچستان کے مخلتف شہروں اور کراچی کے درمیان مسافر بسوں کی ایک بڑی تعداد کے علاوہ دیگر گاڑیوں کی آمدو رفت ہوتی ہے۔

احتیاطی تدابیر اختیار نہ کرنے کی وجہ سے کوئٹہ کراچی ہائی وے پر ٹریفک حادثات ایک معمول بن گئے ہیں۔

بلوچستان ہائی کورٹ نے اس شاہراہ پر بڑھتے ہوئے حادثات کے باعث چند سال قبل متعلقہ حکام کو گاڑیوں کو مقررہ رفتار سے تجاوز نہ کرنے کے حوالے سے اقدامات کی ہدایت دی تھی لیکن تاحال اس سلسلے میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ۔

اسی بارے میں