کوئٹہ میں سکیورٹی فورسز پھر نشانے پر، چار اہلکار ہلاک

Image caption کوئٹہ شہر میں 24گھنٹوں کے دوران سیکورٹی فورسز پر یہ تیسرا حملہ ہے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں نامعلوم مسلح افراد کے حملے میں فرنٹیئر کور کے چار اہلکار ہلاک اور ایک زخمی ہو گیا۔

فرنٹیئر کور کے اہلکاروں پر حملے کا واقعہ کوئٹہ شہر کے ڈبل روڈ کے علاقے میں پیش آیا۔

ایف سی کے ذرائع نے بتایا کہ حملے کا نشانہ بننے والے اہلکار اس علاقے میں ایک گاڑی مرمت کرنے کے لیے لے گئے تھے کہ واپسی پر نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے ان پر فائرنگ کر دی۔

حملے کے نتیجے میں چار ایف سی اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ ایک زخمی ہوا۔

حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تاہم ایف سی اور پولیس کی بھاری نفری نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔

کوئٹہ شہر میں 24گھنٹوں کے دوران سیکورٹی فورسز پر یہ تیسرا حملہ ہے۔

گذشتہ روز منگل کی شام کے وقتسریاب میں اس طرح کے دو حملوں میں پولیس کے چار اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

کوئٹہ شہر میں رواں سال کے دوران ایف سی اہلکاروں پر یہ دوسرا بڑا حملہ ہے۔

اس سے قبل فروری کے مہینے میں ضلع کچہری کے سامنے ہونے والے ایک خودکش حملے میں ایف سی کے تین اہلکاروں سمیت دس افراد ہلاک ہوئے تھے۔

بلوچستان میں حالات کی خرابی کے بعد سے بعض دیگر علاقوں کی طرح کوئٹہ شہر کے مختلف علاقوں میں بھی کمی و بیشی کے ساتھ سکیورٹی فورسز پر حملوں کا سلسلہ جاری ہے۔

تاہم سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ پہلے کے مقابلے میں کوئٹہ سمیت بلوچستان میں امن و امان کی صورتحال میں بہتری آئی ہے۔

اسی بارے میں