بلوچستان: پرتشدد واقعات، سکیورٹی اہلکاروں سمیت تین ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے تین مختلف علاقوں میں پرتشدد واقعات میں دو سکیورٹی اہلکاروں سمیت تین افراد ہلاک اور پانچ زخمی ہوگئے۔

زخمیوں میں سکیورٹی فورسز کے چار اہلکار بھی شامل ہیں۔

دونوں سکیورٹی اہلکاروں کی ہلاکت کا واقعہ سنیچر کو کوئٹہ سے متصل ضلع مستونگ میں پیش آیا۔

مستونگ پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے دونوں اہلکاروں کو نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے نشانہ بنایا۔

ہلاک ہونے والوں میں سے ایک پولیس ہیڈ کانسٹیبل جبکہ دوسرا لیویز فورس کا اہلکار تھا۔

اس کے علاوہ لہڑی کے علاقے گھوڑی میں بارودی سرنگ کے دھماکے میں ایک شخص ہلاک ہو گیا۔

لہڑی میں انتظامیہ کے ذرائع نے بتایا کہ نامعلوم افراد نے اس علاقے میں بارودی سرنگ بچھائی تھی جو اس وقت زوردار دھماکے سے پھٹ گئی جب ایک موٹر سائیکل اس سے ٹکرائی۔

بارودی سرنگ پھٹنے سے موٹر سائیکل پر سوار دو افراد میں سے ایک ہلاک اور دوسرا زخمی ہو گیا۔

ادھر ایران سے متصل ضلع کیچ میں ہونے والے بم دھماکے میں سکیورٹی فورسز کے چار اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

کیچ میں انتظامیہ کے ذرائع کے مطابق نامعلوم افراد نے ضلع کے علاقے بل نگور میں سڑک کے کنارے دھماکے خیز مواد نصب کیا تھا جو اس وقت پھٹ گیا جب سکیورٹی فورسز کا ایک قافلہ وہاں سے گزر رہا تھا۔

اسی بارے میں