’انسانیت کے سب سے بڑے خدمت گار سے محروم ہوگئے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Edhi

پاکستان کے مشہور سماجی کارکن عبدالستار ایدھی کے انتقال پر ملک اور بیرونِ ملک سے سیاسی اور سماجی شخصیات کی جانب سے انھیں خراجِ تحسین پیش کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔

جہاں ملک کی اعلیٰ شخصیات کی جانب سے پیغامات میں ان کی خدمات کا اعتراف کیا جا رہا ہے وہیں سوشل میڈیا پر بھی پاکستان اور پاکستان سے باہر سے لوگ تعزیتی پیغامات بھیج رہے ہیں۔

سوشل میڈیا پر ایدھی اور سلام ایدھی نامی ہیش ٹیگ ٹرینڈ کر رہے ہیں اور ان کے انتقال کی خبر سامنے آتے ہی سوشل میڈیا پر یہ مطالبہ سامنے آیا کہ ان کی تدفین سرکاری سطح پر کی جائے۔

وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا ہے کہ پاکستان ایک بے لوث شخص سے محروم ہو گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایدھی ملک کا اثاثہ تھے اور وہ معاشرے کے پریشان حال، بےیارومددگار اور غریب طبقے کے لیے پیار اور ہمدردی کی جیتی جاگتی مثال تھے۔

وزیرِ اعظم نے یہ بھی کہا ہے کہ عبدالستار ایدھی کا انتقال پاکستان کے عوام کے لیے وہ نقصان ہے جس کی تلافی ہونا ممکن نہیں۔

بھارت کی وزیرِ خارجہ سشما سوراج نے بھی عبدالستار ایدھی کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لیے ٹوئٹر کا سہارا لیا۔

برطانوی کنزرویٹو پارٹی کی رہنما بیرنس سعیدہ وارثی نے ایدھی کے ساتھ اپنی تصویر شیئر کر کے ٹویٹ کی کہ ’انھوں نے بھوکوں کو کھانا کھلایا، بے گھروں کو آسرا دیا، لاوارثوں کو تحفظ فراہم کیا اور دھتکارے ہوؤں کو محبت دی۔‘

اپنے پیغامات میں ان کا کہنا تھا کہ ’میں عبدالستار ایدھی کی وفات پر شدید غمزدہ ہوں۔ وہ ایک نیک روح تھے جنھوں نے اپنی پوری زندگی انسانیت کی خدمت کے لیے وقف کر دی تھی۔‘

Image caption بھارت کی وزیرِ خارجہ سشما سوراج نے بھی عبدالستار ایدھی کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لیے ٹوئٹر کا سہارا لیا

پاکستان کے ایوانِ بالا کے چیئرمین میاں رضا ربانی نے پی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جو کام ایدھی صاحب نے انجام دیا وہ کام حکومتیں نہ کر سکیں۔ اگرچہ یہ کام حکومتوں کا ہے لیکن ایدھی صاحب نے اس کام کے لیے اپنی زندگی صرف کر دی۔

انھوں نے مطالبہ کیا کہ عبدالستار ایدھی کو نوبیل امن انعام ضرور ملنا چاہیے۔

پاکستانی بّری فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے عبدالستار ایدھی کے انتقال پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ پاکستان نے ایک عظیم شخصیت کو کھو دیا ہے۔ ’وہ عالمی سطح پر پہچانے جانے والے اور فلاحی کام کرنے والے انسان تھے۔‘

متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما واسع جلیل کا کہنا ہے کہ ایدھی صاحب اب ہم میں موجود نہیں یہ ملک کے لیے بہت بڑا نقصان ہے اور ان کے کام کو الفاظ میں بیان نہیں کیا جا سکتا۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ انھیں ایدھی صاحب کے انتقال کی خبر سن کر دلی افسوس ہوا اور وہ ایک عظیم پاکستانی اور ہمدرد شخصیت تھے۔

پنجاب کے وزیرِ اعلیٰ شہباز شریف نے ٹوئٹر پر پیغام میں کہا کہ ’ایدھی ہمارے زمانے کی عظیم ترین شخصیات میں سے ایک تھے‘ جنھوں نے اپنی ساری زندگی انسانیت کے خدمت کے لیے وقف کر رکھی تھی اور وہ ایک آئیکون اور آنے والی نسلوں کے لیے مثال ہیں۔

امیرِ جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے بھی عبدالستار ایدھی کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کااظہار کے ساتھ مرحوم کے لئے مغفرت کی دعا اور پسماندگان سے گہری ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

سراج الحق کا کہنا ہے کہ عبدالستار ایدھی نے اپنی زندگی دکھی انسانیت کی خدمت کے لیے وقف کر رکھی تھی اور ان کی وفات سے ملک انسانیت کا درد رکھنے والے مخلص رہنما سے محروم ہوگیا ہے۔

اسی بارے میں