کوئٹہ میں فائرنگ کے واقعے میں ایک وکیل قتل

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption حملہ آور موٹر سائیکل پر سوار تھے جو بعد میں فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں فائرنگ کے واقعے میں ایک وکیل کو قتل کر دیا گیا ہے۔

وکیل کو ہلاک کرنے کا واقعہ کوئٹہ شہر میں فیصل ٹاؤن کے علاقے میں پیش آیا۔

بلوچستان بار ایسوسی ایشن نے جہانزیب علوی کے قتل کے واقعے کی مذمت کی ہے۔ بلوچستان ایسوسی ایشن نے ان کے قتل کے خلاف بدھ کو عدالتوں کے بائیکاٹ کی کال دی ہے۔

بروری روڈ پولیس اسٹیشن کے ایک اہلکار نے بتایا کہ جس وقت واقعہ پیش آیا جہانزیب علوی ایڈووکیٹ عدالت سے فارغ ہونے کے بعد فیصل ٹاؤن میں واقع اپنے گھر جا رہے تھے۔

انھوں نے بتایا کہ بروری روڈ سے فیصل ٹاؤن کی جانب موڑتے ہوئے وہ گاڑی کے ٹائروں میں ہوا بھروانے کے لیے رکے۔

پولیس اہلکار کے مطابق وہاں دو مسلح افراد آئے اور وکیل پر فائر کھول دیا جس کے نتیجے میں وہ ہلاک ہوگئے۔

پولیس اہلکار نے بتایا کہ حملہ آور موٹر سائیکل پر سوار تھے جو بعد میں فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

پولیس اسٹیشن کے اہلکار کے مطابق وکیل کے رشتہ داروں نے ان کے قتل کا مقدمہ درج کرنے کے لیے درخواست دی ہے۔

اہلکار نے بتایا کہ مقتول کے رشتہ داروں نے درخواست میں بعض لوگوں کو نامزد کیا ہے پولیس اہلکار نے دعویٰ کیا کہ وکیل کے قتل کا واقعہ خاندانی تنازع کے باعث پیش آیا ہے۔

اسی بارے میں