جمرود سے چار خود کش حملہ آورگرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ان حملہ آوروں کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی تاہم انھیں نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے جہاں ان سے تفتیش جاری ہے

پاکستان کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں پولیٹکل انتظامیہ کے مطابق ایک کارروائی میں سرحد پار سے آئے چار خود کش حملہ آوروں کو بارود سے بھری پانچ جیکٹوں سمیت گرفتار کر لیا۔

یہ کارروائی تحصیل جمرود کے علاقے شاہ کس کے قریب کی گئی۔

٭ بلوچستان میں سوگ، کوئٹہ میں’ کومبنگ آپریشن‘ کا فیصلہ

٭ ’بین الاقوامی دہشت گردی کے خطرات سے نمٹیں گے‘

٭ کوئٹہ: سکیورٹی فورسز کا آپریشن، 40 افراد گرفتار

اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ جمرود ضیا اللہ مروت نے بی بی سی کو بتایا کہ انھیں خفیہ ایجنسیوں کے ذریعے اطلاع ملی تھی کہ چار خود کش حملہ آور اس علاقے میں روپوش ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیٹکل انتظامیہ کے اہلکاروں نے اس اطلاع پر سرچ آپریشن کیا اور ایک مکان سے چار خود کش حملہ آوروں کو گرفتار کر لیا۔

انھوں نے کہا کہ ان کے قبضے سے پانچ خود کش جیکٹس برآمد ہوئیں اور ہر جیکٹ میں تقریبا ًپانچ کلو گرام تک بارودی مواد نصب تھا۔

ضیا اللہ مروت نے بتایا کہ یہ حملہ آور افغانستان سے پاکستان کی حدود میں داخل ہوئے تھے اور ابتدائی تفتیش سے معلوم ہوا ہے کہ وہ پاکستان کے یومِ آزادی کے موقع پر پشاور اور اس کے مضافات میں بڑی کارروائیوں کا ارادہ رکھتے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ حملہ آوروں کا نشانہ سرکاری ادارے یا اہلکار ہو سکتے تھے۔

ان حملہ آوروں کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی تاہم انھیں نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے جہاں ان سے تفتیش جاری ہے۔

دوسری جانب پاکستانی فوج کے تعلقاتِ عاملہ کے محکمے کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ضلع راولپنڈی کے علاقے گوجر خان اور کلر کہار میں سرچ آپریشن کے دوران دو اہم شدت پسند کمانڈروں سمیت چھ افراد کو گرفتار کیا گیا۔

بیان کے مطابق ان افراد کے قبضے سے بھاری اسلحہ برآمد ہوا جس میں تیار شدہ دیسی ساختہ بم شامل ہیں۔

خیال رہے کہ پاکستان کی فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کوئٹہ ہسپتال میں خود کش دھماکے کے بعد کوئٹہ میں ’کومبنگ آپریشن‘ کا حکم دیا تھا جس کے بعد مختلف علاقوں میں یہ سرچ آپریشن جاری ہے۔

پشاور میں تین روز پہلے ریگی کے علاقے میں انسداد دہشت گردی کے محکمے نے ایک کارروائی میں افغان خفیہ ایجنسی کے دو کارندوں کو گرفتار کیا تھا جن کے قبضے سے حکام کے مطابق دستی بم اور دیگر بارودی مواد برآمد ہوا تھا۔

اسی بارے میں