امریکی شہری کا ویزہ منسوخ، ملک بدر کرنے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ AP

پاکستان کی وزارت داخلہ نے بلیک لسٹ قرار دیے گئے امریکی شہری میتھیو بیرٹ کا ویزہ منسوخ کر دیا ہے جس کے بعد اُنھیں آئندہ چند روز میں ملک بدر کر دیا جائےگا۔

وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کے حکم پر امریکی شہری کا ویزہ منسوخ کیا گیا ہے۔

میتھیو بیرٹ کو چھ اگست کو اس وقت اسلام آباد سے گرفتار کیا گیا جب وہ پاکستانی ویزے پر اسلام آباد آئے تھے۔ امریکی شہری نے یہ پاکستانی ویزا ہوسٹن میں پاکستانی قونصلیٹ سے حاصل کیا تھا۔

٭ امریکی شہری کی رپورٹ چوہدری نثار کو پیش کر دی گئی

٭ ’امریکی شہری کے کاغذات مکمل ہیں تو گرفتاری کیوں؟‘

میتھیو بیرٹ کے چھ روزہ جسمانی ریمانڈ کے بعد راولپنڈی کی ایک مقامی عدالت نے جمعے کے روز ملزم کو 14 روز کے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا تھا۔

سماعت کے دوران بھی ملزم نے عدالت کو بتایا تھا کہ اس نے پاکستان میں شادی کر رکھی ہے جنھیں ملنے کے لیے وہ پاکستان آیا تھا۔ تاہم سماعت کے دوران میتھیو بیرٹ کی بیوی اور بچے عدالت میں موجود نہیں تھے۔

وزارت خارجہ کے ذرائع کے مطابق میتھیو بیرٹ کی گرفتاری کے بعد امریکی حکام نے پاکستان پر دباؤ بڑھایا تھا جس کے پیش نظر امریکہ میں پاکستانی سفارت خانے کے اعلیٰ حکام کو پاکستان آکر حکومت کے ساتھ اس معاملے پر بات کرنا پڑی۔

تصویر کے کاپی رائٹ afp
Image caption وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کے حکم پر امریکی شہری کا ویزہ منسوخ کیا گیا ہے

بلیک لسٹ قرار دیے گئے امریکی شہری کا معاملہ سامنے آنے کے بعد وزارت داخلہ نے غیر ملکیوں کو پاکستانی ویزے کا اجرا وزارت داخلہ کی اجازت سے مشروط کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

امریکی شہری میتھیو بیرٹ کو سنہ 2011 میں اس وقت بلیک لسٹ قرار دے کر ملک بدر کیا گیا تھا جب وہ پنجاب کے علاقے فتح جنگ میں کالا چٹا پہاڑ کے قریب واقع حساس عمارتوں میں داخل ہونے کی کوشش کر رہا تھا۔

ایف آئی اے کے مطابق ملزم میتھیو نے لینڈنگ کارڈ پر غلط کوائف لکھ کر اسلام آباد ایئرپورٹ پر واقع ایف آئی اے کے کاؤنٹر سے اپنے آپ کو کلیئر کروایا، تاہم حساس اداروں کے اہلکاروں کو جب اس واقع کا علم ہوا تو اُنھوں نے سراغ لگا کر امریکی شہری کو گرفتار کرلیا۔

میتھیو بیرٹ کو ائیرپورٹ سے کلیرنس دینے والے ایف آئی اے کے دو اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کر کے اُنھیں جیل بھجوا دیا گیا ہے۔

اسی بارے میں