پشاور میں پولیس موبائل پر بم حملے میں ایک اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption موبائل وین میں ڈرائیور کے علاوہ اور کوئی اہلکار سوار نہیں تھا(فائل فوٹو)

پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں پولیس موبائل پر ہونے والے ایک ریموٹ کنٹرول بم حملے میں ایک اہلکار ہلاک اور ایک راہگیر زخمی ہوگیا ہے۔

پولیس کے مطابق یہ واقعہ اتوار کو سہ پہر پشاور شہر کے علاقے بچگی روڈ پر متھرا پولیس سٹیشن کی حدود میں پیش آیا۔

*مردان میں خودکش حملے میں 12 ہلاک، پشاور میں حملے کی کوشش ناکام

*پشاور میں فائرنگ، انٹیلیجنس بیورو کا انسپکٹر ہلاک

پشاور پولیس کے ایک اہلکار گل سید نے بی بی سی کو بتایا کہ پولیس کی ایک موبائل وین جا رہی تھی کہ اس دوران سڑک کے کنارے پہلے سے نصب ایک ریموٹ کنٹرول بم دھماکے کا نشانہ بنی۔

انھوں نے کہا کہ حملے میں ایک پولیس اہلکار ہلاک اور ایک راہگیر زخمی ہو گیا۔

انھوں نے کہا کہ موبائل وین میں ڈرائیور کے علاوہ اور کوئی اہلکار سوار نہیں تھا۔ دھماکے میں گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہے۔

خیال رہے کہ پشاور میں یہ واقعہ ایسے وقت پیش آیا ہے جب جمعے کو ہی پشاور کے علاقے ورسک میں عیسائی برادری کی ایک کالونی پر شدت پسندوں کی جانب سے حملہ کی کوشش کی گئی تھی جس میں ایک شخص ہلاک ہوا تھا۔

سکیورٹی فورسز نے اس حملے کی ناکام بناتے ہوئے چار دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا تھا۔ اس علاوہ اسی دن مردان میں کچہری کی حدود میں ہونے والے خودکش دھماکے میں پولیس اہلکاروں اور وکلا سمیت کم سے کم 12 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ پشاور میں پولیس اہلکاروں کو ہدف بناکر قتل کے واقعات کا سلسلہ تواتر سے جاری ہے تاہم اس میں پہلے کے مقابلے میں میں کافی حد تک کمی دیکھی گئی ہے۔

اسی بارے میں