انڈیا کا اسلام آباد میں سارک کانفرنس میں شرکت سے انکار

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption انڈیا کا کہنا ہے’ایک ملک نے ایسا ماحول بنا دیا ہے جو اجلاس کے لیے مناسب نہیں ہے‘

انڈیا نے کہا ہے کہ وہ اسلام آباد میں نو اور دس نومبر کو ہونے والے سارک کانفرنس کے اجلاس میں شرکت نہیں کرے گا۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق انڈین وزارت خارجہ نے اس بات کی تصدیق کی ہے۔

انڈیا نے اس بارے میں سارک کانفرنس اجلاس کی صدارت کرنے والے ملک نیپال کو اس کی اطلاع دے دی ہے۔

٭ ’مسائل کے حل کے لیے سخت گیر موقف میں لچک ضروری‘

بھارت نے نیپال سے کہا ہے کہ ’ایک ملک نے ایسا ماحول بنا دیا ہے جو اجلاس کے لیے مناسب نہیں ہے۔‘

بھارت کے خارجہ امور کے ترجمان وکاس سوروپ نے ٹویٹ کیا ہے، ’علاقائی تعاون اور انتہا پسندی ایک ساتھ نہیں چل سکتے، لہذا انڈیا اسلام آباد کانفرنس میں شامل نہیں ہو گا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTR

سارک سربراہی کانفرنس، جنوبی ایشیا کے آٹھ ممالک کے سربراہوں کا اجلاس ہے جو ہر دو سال میں منعقد ہوتا ہے۔

اسلام آباد میں ہونے والی ملاقات اس کانفرنس کا 19 واں اجلاس ہے۔

انڈین وزارت خارجہ نے براہ راست پاکستان کا نام نہیں لیا۔ تاہم اس نے یہ اشارہ بھی دیا ہے کہ اس کانفرنس میں ایک اور ملک شامل نہیں ہو سکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ہندوستان کا اعلان غیر متوقع ہے اور اس حوالے سے ہم سے باضابطہ رابطہ نہیں کیا گیا

پاکستان کا ردِ عمل

دوسری جانب پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ انڈیا کا اعلان غیر متوقع ہے اور اس حوالے سے ہم سے باضابطہ رابطہ نہیں کیا گیا۔

انھوں نے لکھا کہ انڈین وزراتِ خارجہ کی ٹویٹ سے انڈیا کی شرکت نہ کرنے کا علم پاکستان کو ہوا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’پاکستان اب بھی علاقائی امن اور تعاون کا پابند ہے۔‘

ٹویٹ میں نفیس زکریا کا کہنا تھا ’جہاں تک کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کے لیے دی گئی توجیہہ کی بات ہے تو دنیا جانتی ہے کہ انڈیا پاکستان میں دہشت گردی پھیلا رہا اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کررہا ہے۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ ’انڈیا، پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرکے بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی کررہا ہے۔‘

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں