انڈیا: ہسپتال میں آتشزدگی سے 19 افراد ہلاک

بھونیشور کے ہسپتال میں آتشزدگی تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption بعض افراد نے آگ کے سبب کھڑکیوں سے چھلانگ لگانے کی کوشش بھی کی

انڈیا کی مشرقی ساحلی ریاست اڑیسہ (اوڈیشہ) کے دارالحکومت بھونیشور میں ایک نجی ہسپتال میں آگ لگنے سے کم از کم 19 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

مقامی حکام نے بتایا کہ آگ کی ابتدا ایس یو ایم ہسپتال کے ڈایالسس وارڈ سے ہوئی اور پھر یہ دوسرے وارڈوں میں بھی پھیل گئي۔

آگ نے ہسپتال کے آئی سی یو وارڈ کو بھی اپنی گرفت میں لے لیا جس کے بعد مریضوں کو وہاں سے باہر نکالا گیا۔

درجنوں مریضوں کو شہر کے دوسرے ہسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا ہے۔ ان میں سے 14 مریضوں نے سرکاری ہسپتال پہنچنے کے دوران ہی دم توڑ دیا۔

حکام کے مطابق زیادہ تر اموات دھویں کی وجہ سے ہوئیں اور ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption وزیر اعظم نریندر مودی نے اس سانحے کو جانکاہ قرار دیا ہے

بھونیشور سے صحافی سندیپ ساہو نے بتایا ہے کہ مزید 32 مریضوں کا شہر کے مختلف ہسپتالوں میں علاج جاری ہے جبکہ بعض مریضوں کو دوسرے شہر کٹک بھی بھیجا گیا ہے۔

آگ بجھانے کے لیے سات گاڑیوں اور 120 فائر فائٹروں نے سخت محنت کی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ٹوئٹر کے ذریعے آتشزدگی پر سخت رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption آگ بجھانے کے لیے تقریباً 200 فائر فائٹروں کی خدمات حاصل تھیں

سندیپ ساہو کے مطابق لواحقین اپنے اپنے مریضوں کی تلاش میں ایک ہسپتال سے دوسرے ہسپتال بھٹک رہے ہیں اور ان کی مدد کے لیے اڑیسہ حکومت نے ایک مفت نمبر جاری کیا ہے۔

ریاست کے وزیر اعلیٰ نوین پٹنائک نے ہسپتال کا دورہ کیا ہے اور اس حادثے کی تحقیقات کا حکم بھی دیا ہے۔

اس سے قبل سنہ 2011 میں کولکتہ کے ایک ہسپتال میں لگنے والی آگ میں 89 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں