انڈیا: نوٹ تبدیل کرنے والوں کی انگلی پر سیاہی کا نشان لگے گا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption انڈیا میں پانچ سو اور ایک ہزار کے نوٹ پر پابندی کے بعد سے ہر جانب افرا تفری کا ماحول ہے

انڈیا میں حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ پانچ سو اور ہزار روپے کے نوٹ کو تبدیل کرنے والوں کی انگلیوں پر نہ مٹنے والی سیاہی لگائی جائے گی تاکہ بار بار ایسا کرنے والوں کو باز رکھا جا سکے۔

حکام کے مطابق یہ وہی سیاہی ہوگی جو ووٹ ڈالتے وقت ووٹروں کی انگلیوں پر لگائی جاتی ہے۔

اقتصادی امور سے متعلق محکمے کے سیکریٹری شكتی كانت داس نے منگل کو نامہ نگاروں کو بتایا کہ یہ کام منگل کے روز سے ہی بڑے شہروں کے بینکوں میں شروع کر دیا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ ایسی اطلاعات مل رہی ہیں کہ کچھ لوگ ایک ہی دن میں بار بار نوٹ تبدیل کر رہے ہیں۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ اس بات کی نشاندہی کیسے ہوگی کہ سیاہی کا نشان ایک دن پہلے یا ایک دن بعد کا ہے تو ان کا کہنا تھا کہ اس کے بارے میں بینکوں کو ہدایات دی جاری کی جا رہی ہیں۔

واضح رہے کہ حکومت نے پرانے نوٹوں پر پابندی کے بعد ایک دن میں ایک شخص کو چار ہزار روپے کے نوٹ تبدیل کرنے کی ہی اجازت دی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ملک کے بیشتر ایے ٹی ایم خالی ہیں اور بینکوں کے باہر زبردست بھیڑ ہے

داس نے یہ بھی بتایا کہ لوگوں کو پریشانی سے بچانے کے لیے بینکوں میں مائیکرو اے ٹی ایم لگائے جارہے ہیں۔ یہ مختلف طرح کا ایک گرین چینل ہوگا جس میں لوگ ڈیبٹ یا کریڈٹ کارڈ سے پیسے نکال سکتے ہیں۔

انھوں نے بتایا ہے کہ شکایت ملنے کے بعد مندروں اور ٹرسٹوں میں عطیہ دینے پر بھی نظر رکھی جا رہی ہے۔

سکریٹری کے مطابق ان اقدامات سے حکومت اس بات کو یقینی بنائے گی کہ لوگوں کو کم پریشانی ہو۔ انھوں نے کہا کہ ملک میں نقد کرنسی کی کمی نہیں ہے۔

انہوں نے بتایا کہ حکومت کی جانب سے ضروری چیزوں کی فراہمی پر سخت نظر رکھی جا رہی ہے اس لیے لوگوں کو گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ ملک میں نمک کی کوئی کمی نہیں ہے۔

واضح رہے کہ انڈیا میں یہ افواہ گرم ہوگئی تھی کہ نمک ک قلت ہے جس کے بعد دکانوں پر نمک ملنا بند ہوگیا تھا۔

حکومت نے دو ہزار روپے کا جو نیا کرنسی نوٹ جاری کیا ہے اس سے رنگ چھوٹ رہا ہے اور اس سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ یہ عام بات ہے اور جو نوٹ رنگ نہیں چھوڑ رہے ہیں وہ جعلی ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں