جے للیتا کے سوگ میں لوگوں نے سر منڈوانا شروع کر دیا

جے للیتا تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

پیر کے روز تمل ناڈو کی ہر دلعزیز وزیرِ اعلیٰ جے للیتا کے انتقال کے سوگ میں انڈیا میں لوگ اپنے سر منڈوا رہے ہیں۔

منگل کو ہزاروں لوگوں نے 68 سالہ سابقہ اداکارہ کی آخری رسومات میں شرکت کی۔ انھیں چینئی میں مرینا بیچ کے قریب دفن کیا گیا۔

انڈیا میں کسی کی موت کے بعد سر منڈوانے کی رسم عام ہے، لیکن عام طور پر ایسا کسی قریبی عزیز کی موت پر کیا جاتا ہے۔

جے للیتا کے مداح ان کی قبر کے قریب پلاسٹک کی کرسیوں پر بیٹھ کر باری باری سر منڈوا رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

ایک بوڑھی عورت نے با آوازِ بلند بین کرتے ہوئے اپنا سر پیٹا شروع کر دیا۔ پھر اس نے اپنا سر قبروں کے گرد کھڑی کی گئی رکاوٹوں سے دے مارا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

47 سالہ پاراماشیوا نے خبررساں ادارے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے کہا: 'وہ ہر کسی کا خیال رکھتی تھیں اور اپنے لیے کچھ نہیں چاہتی تھیں۔'

’سرمنڈن‘ کی رسم مذہبی عقائد کے تحت ادا کی جاتی ہے اور اس کا مقصد دیوتاؤں کی خوشنودی حاصل کرنا ہوتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں