رخائن میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کا کوئی ثبوت نہیں ملا: سرکاری کمیشن

روہنگیا مسلمانوں تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption میانمار کی حکومت کی جانب سے قائم کیے جانے والا کمیشن رواں ماہ کے آخر میں اپنی حتمی رپورٹ جاری کرے گا

میانمار کی حکومت کی جانب سے قائم کیے جانے والے ایک کمیشن کا کہنا ہے کہ اسے ریاست رخائن میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کا کوئی ثبوت نہیں ملا ہے۔

اپنی عبوری رپورٹ میں کمیشن کا کہنا ہے کہ بڑے پیمانے پر ریپ کے الزامات کی حمایت کے لیے ناکافی ثبوت تھے۔

روہنگیا مسلمان کی سربریدہ لاش دریا سے ملی

'ہم روہنگیا ہیں، ہمیں مار ہی دیجیے'

روہنگیا مسلمانوں سے میانمار کو کیا مسئلہ ہے؟

کمیشن نے برما کی سکیورٹی افواج کی جانب سے لوگوں کو مارنے کے دعوؤں کا ذکر نہیں کیا ہے۔

برما کی ریاست رخائن میں گذشتہ سال اکتوبر میں فوج کی شورش مہم شروع کیے جانے کے بعد سے روہنگیا کے لوگوں کی جانب سے مبینہ غیر انسانی سلوک کے الزامات سامنے آتے رہے ہیں۔

بعض افراد کا تو یہاں تک کہنا ہے کہ میانمار کی حکومت کے بعض اقدامات نسلی کشی کے برابر ہیں۔

میانمار کی حکومت کی جانب سے قائم کیے جانے والا کمیشن رواں ماہ کے آخر میں اپنی حتمی رپورٹ جاری کرے گا۔

کمیشن نے اپنی عبوری رپورٹ میں نسلی کشی کے الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔ کمیشن کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس کے پاس اس بات کے 'ناکافی ثبوت' ہیں کہ سکیورٹی فورسز نے کسی کو ریپ کیا ہو۔

کمیشن کا کہنا ہے کہ وہ آتش زنی، گرفتاریوں اور تشدد کی ابھی تفتیش کر رہا ہے۔

میانمار میں موجود بی بی سی کے نامہ نگار جُونا فشر کا کہنا ہے کہ کمیشن نے سب سے زیادہ اہم بات کا کہیں ذکر نہیں کیا کہ برما کی سکیورٹی فورسز عام شہریوں کو ہلاک کر رہی ہیں۔

رواں ہفتے کے شروع میں میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر پولیس کے تشدد کی ویڈیو منظرعام آنے کے بعد کئی اہلکاروں کو حراست میں لیا گیا تھا۔

رخائن میں صحافیوں اور تفتیش کاروں کا داخلہ بند ہے جس کی وجہ سے ان الزامات کی آزادانہ تصدیق مشکل ہے۔

رخائن میں میانمار کی مسلمان روہنگیا اقلیت آباد ہے جس کا شمار دنیا کی سب سے زیادہ ستائی جانے والی اقلیتوں میں ہوتا ہے۔

ایمنیسٹی انٹرنیشنل نے میانمار کی سکیورٹی فورسز پر ریپ، قتل اور تشدد کا الزام عائد کیا ہے۔

فوج ان الزامات کی تردید کرتی ہے اور اس کا کہنا ہے کہ وہ رخائن میں انسدادِ دہشت گردی کی کوششوں میں مصروف ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں