طالبان کے ہاتھوں اغوا ہونے والے امریکی اور آسٹریلوی پروفیسر کی ویڈیو جاری

  • 12 جنوری 2017
تموتھی وویکس تصویر کے کاپی رائٹ VIA AP

طالبان نے گذشتہ سال افغانستان میں اغوا کیے جانے والے آسٹریلوی اور امریکی پروفیسر کی ویڈیو جاری کی ہے۔

امریکی کیون کنگ اور آسٹریلوی ٹموتھی وویکس کابل میں امیریکن یونیورسٹی آف افغانستان میں پروفیسر تھے۔

ان دونوں کو گذشتہ سال اگست میں یونیورسٹی کے باہر سے اغوا کیا گیا تھا۔ مسلح اغوا کار نے سکیورٹی فورسز کا یونیفارم پہن رکھا تھا۔

اس حوالے سے پینٹاگون کا کہنا تھا کہ ان افراد کے اغوا ہونے کے ایک ماہ بعد امریکی فورسز انھیں بازیاب کرانے کی ایک ناکام کوشش کی تھی۔

جاری ہونے والے ویڈیو سے معلوم ہوتا ہے کہ اسے یکم جنوری کو بنانے کے بعد آن لائن پوسٹ کیا گیا۔ اس ویڈیو میں دکھائے جانے والا شخص کہہ رہا ہے کہ’انھیں بہتر حالت میں رکھا گیا ہے۔‘

تاہم وہ اس ویڈیو میں نو منتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے قیدیوں کے تبادلے کی پیشکش کرنے کی اپیل کر رہے ہیں کہ تاکہ انھیں رہا کیا جائے، دوسری صورت میں ان کے بقول انھیں مار دیا جائے گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ VIA AP

امریکہ کے محکمہ خارجہ نے اس ویڈیو کے صحیح ہونے یا اس پر کسی قسم کا تبصرہ کرنے سے انکار کیا ہے۔ تاہم انھوں نے صرف ان افراد کو اغوا کیے جانے کی ’مذمت‘ کی ہے۔

دوسری جانب آسٹریلیا کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ ’آسٹریلوی حکومت دیگر حکومتوں کے ساتھ اپنے شہری کی رہائی کے حوالے سے قریبی رابطے میں ہے۔‘

تاہم انھوں نے اپنے شہری کے تحفظ کے پیش نظر اس پر مزید کوئی تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں