رشتہ داروں کا اصرار،انڈین سپاہی کی لاش کا دوبارہ پوسٹ مارٹم

انڈیا فوج تصویر کے کاپی رائٹ AFP

انڈیا میں پولیس کا کہنا ہے کہ روئے میتھو نامی سپاہی کی میت کو ان کے آبائی علاقے پہنچانے کے بعد ان کا دوبارہ پوسٹ مارٹم کیا گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ان کے آبائی علاقے کیرالہ میں ان کے خاندان کے اصرار پر دوبارہ پوسٹ مارٹم کیا گیا۔

خیال رہے کہ روئے میتھیو کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ انھوں نے مبینہ طور پر انڈین فوج میں ہونے والی بے قاعدگیوں پر سے پردہ اٹھایا تھا۔

تاہم گذشتہ جمعرات کو روئے میتھیو اپنی بیرک میں مردہ حالت میں پائے گئے۔

انڈین ذرائع ابلاغ کے مطابق روئے میتھیو کی لاش کا دوبارہ پوسٹ مارٹم کروانے کے حوالے سے ان کے ایک رشتے دار کا کہنا ہے کہ ’کئی سوالوں کے جواب ابھی نہیں ملے ہیں۔‘

دوسری جانب فوجی اہلکاروں کے خیال میں سپاہی نے خود کشی کی ہے۔

واضح رہے کہ حالیہ مہینوں میں کئی جونیئر سپاہیوں نے کیمپوں کی خراب صورتحال کی شکایات کی ہیں جس پر انڈین فوج نے تنبیہ کی ہے کہ ایسے مسائل کے بارے میں اندرونی طور پر آگاہ کیا جائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER

گذشتہ دنوں انڈیا میں بی ایس ایف یعنی بارڈر سکیورٹی فورسز کے ایک جوان نے اپنی خوراک کے معیار سے متعلق اپنی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر نشر کرکے تہلکہ مچا دیا تھا۔

سپاہی تیج بہادر یادو نے اس ویڈیو میں بی ایس ایف اور انڈین حکومت کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا تھا۔

اپنے پیغام میں تیج بہادر نے الزام لگایا تھا کہ جوانوں کے لیے سامان کی کمی نہیں ہے لیکن ان کے حصے کا راشن فوجی افسر بازار میں فروخت کر رہے ہیں اور انھیں مناسب کھانا تک نہیں ملتا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں