باپ اور دادی نے دو بچوں کو بھینٹ چڑھا دیا

انڈیا تصویر کے کاپی رائٹ RAVINDER SINGH ROBIN
Image caption مارے جانے والے بچوں میں پانچ سال کا ایک لڑکا اور تین سال کی ایک لڑکی ہے

انڈیا کی ریاست پنجاب کے علاقے بھٹنڈا کے ایک گاؤں میں ایک باپ نے اپنی ماں کے ساتھ مل کر اپنے دو بچوں کو مذہب کے نام پر بھینٹ چڑھا دیا ہے۔

بھٹنڈا کے سینیئر پولیس سپرنٹنڈنٹ سواپن شرما نے بتایا کہ بچوں کے والد كلودر سنگھ نے اپنی ماں نرمل کور کے ساتھ مل کر بچوں کو کرنٹ لگانے کے بعد ان کے منہ میں زبردستی بلب ٹھونس دیا۔

انڈیا: جھارکھنڈ میں ڈائن کے نام پر ہلاکتیں

اڑیسہ: جادو ٹونے کا شبہ، ایک ہی خاندان کے چھ ارکان قتل

بچوں کی موت کی خبر سے گاؤں والے جمع ہو گئے اور ملزمان کو گرفتار کرنے کے لیے پولیس کو بلا لیا۔

ملزمان کے رشتہ دار راشی سنگھ نے دعویٰ کیا ہے کہ گذشتہ چار پانچ دنوں سے ان کے گھر میں جھگڑا چل رہا تھا۔

ان کے مطابق، چار پانچ دن پہلے ان کے گھر ایک ’تانترک‘ آیا تھا اور اس وقت ان کے گھر سے ڈھول کے بجنے کی آوازیں بھی سنائی دی تھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ RAVINDER SINGH ROBIN

راشی سنگھ کا دعویٰ ہے کہ تانترک كالاوالی کا رہنے والا ہے اور اسی کی وجہ سے یہ سب کچھ ہوا ہے۔

انھوں نے بتایا، ’گذشتہ رات جب میں ان کے گھر گیا تو انھوں نے بچوں کا گلا گھونٹنے کے بعد منہ میں بلب ڈال کر مار ڈالا تھا اور ایک دوسرے سے گالی گلوچ کر رہے تھے۔‘

انھوں نے بتایا، ’مارے جانے والے بچوں میں پانچ سال کا ایک لڑکا اور تین سال کی ایک لڑکی ہے۔‘

بھٹنڈا کے ایس ایس پی سواپن شرما نے بتایا کہ بچوں کے دادی کی دماغی حالت ٹھیک نہیں تھی اور وہ اپنے پوتے اور پوتی میں بھوت پریت کا سایہ ہونے کے وہم کی وجہ سے تانترک بابوں کے پاس جاتی رہتی تھی۔

پولیس کا دعویٰ ہے کہ یہ بزرگ عورت اپنے بیٹے کے ساتھ مل کر تین چار دنوں سے بچوں کو بجلی کے جھٹکے دے رہی تھی۔

اسی بارے میں