انڈیا: گوا میں برطانوی خاتون پر جنسی حملہ اور قتل

تصویر کے کاپی رائٹ MCLAUGHLIN FAMILY
Image caption میکلاكلن پر جنسی حملہ کیا گیا اور ان کے چہرے اور سر پر زخم کے نشانات بھی پائے گئے ہیں

انڈیا میں سیاحت کے لیے معروف مقام گوا کی پولیس کا کہنا ہے کہ آئرلینڈ سے تعلق رکھنے والی جس خاتون کی لاش برآمد ہوئی تھی ان پر جنسی حملہ کیا گيا تھا۔

ڈینیئل میكلالن کا تعلق آئرلینڈ سے تھا جو برطانوی پاسپورٹ پر انڈیا سیاحت کے لیے آئی تھیں۔ منگل کے روز ان کی لاش گوا میں كیناکونا کے سیاحتی مقام کے پاس کھلے میدان میں پائی گئی تھی۔

اس سلسلے میں پولیس نے 24 سال کے ایک شخص کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کیا ہے۔ مذکورہ شخص کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کیا گيا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption لاش گوا میں كیناکونا کے سیاحتی مقام کے پاس کھلے میدان میں پائي گئی تھی

دریں اثنا پولیس کو اس قتل سے قبل کا سی سی ٹی وی فوٹیج بھی مل گئی ہے۔ سی سی ٹی وی فوٹیج میں وہ خاتون ایک مرد کے ساتھ سڑک پر چلتی ہوئی دیکھی جا سکتی ہیں۔

پولیس کا خیال ہے کہ میکلاكلن پر جنسی حملہ کیا گیا تھا۔ ان کے چہرے اور سر پر زخم کے نشانات بھی پائے گئے ہیں۔ ان کی لاش کی شناخت کچھ غیر ملکی سیاحوں کی مدد سے کی گئی تھی۔

ڈینیئل کی ماں ایڈریا برینگن نے اپنی بیٹی کے قتل کی خبر سے صدمے میں ہیں۔ انھوں نے کہا کہ 'سب کو ان کی بیٹی کی بہت یاد آئے گی۔'

گذشتہ برس گوا کی ایک عدالت نے برطانیہ سے تعلق رکھنے والی ایک نوجوان لڑکی سكارلیٹ کیلنگ کے ساتھ جنسی زیادتی اور ان کے قتل کے الزام سے دو افراد کو بری کر دیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption فايونا میكّون کی بیٹی کیلنگ کا بھی گوا میں جنسی زیادتی کے بعد قتل کر دیا گيا تھا

15 سالہ کیلنگ کی لاش بھی پراسرار طریقے سے سنہ 2008 میں گوا کے معروف ساحل سمندر انجنا سے برآمد ہوئی تھی۔ پولیس نے اس سلسلے میں دو افراد پر جنسی زیادتی اور قتل کا مقدمہ چلایا تھا لیکن عدالت نے ثبوت نہ ہونے کی وجہ سے دونوں کو بری کر دیا تھا۔

کیلنگ کی ماں فايونا میكّون کا کہنا ہے کہ ڈینیئل میكا كلن کی موت کی خبر سے وہ بہت افسردہ ہیں۔

انہوں نے کہا: 'یہ بہت خوفناک ہے۔ میں سمجھ سکتی ہوں کہ ان کی ماں پر کیا گزر رہی ہو گی۔'

انڈیا میں بیرونی سیاحوں کے ساتھ جنسی زیادتیاں اور پھر ان کے قتل کے واقعات سے تشویش پائی جاتی ہے۔ اس طرح کے کئي مقدمات اب بھی عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں