انڈیا: ٹویٹ کے بعد بھوکی بچی کو ٹرین میں دودھ مہیا کیا گيا

تصویر کے کاپی رائٹ MINISTRY OF RAILWAYS
Image caption ٹرین میں اس بچی کی ماں دودھ کے لیے پریشان تھی جس کے سبب ٹویٹ کیا گيا

سوشل میڈیا پر انڈین ریلوے کی اس بات کے لیے ستائش ہورہی کہ ٹرین پر سوار ایک مسافر کی ٹویٹ کے بعد ریلوے کے عملے نے کم سن بھوکی بچّی کو دودھ مہیا کر دیا۔

آنگھا نکم نامی ایک خاتون نے ٹرین میں سفر کے دوران دیکھا کہ ایک ماں اپنی چھوٹی سی بچی کو دودھ دینے کے لیے پریشان ہے۔

انھوں نے اسی وقت وزارت ریل کے صفحے پر ٹویٹ کر کے مدد کی درخواست کی جس کے بعد اگلے ہی سٹیشن پر انہیں دودھ مہیا کر دیا گيا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

وزارت ریل آج کل ٹویٹر پر کافی فعال رہتی ہے اور ماضی میں بھی اس نے کئی بار مشکل میں پھنسنے والے مسافروں کی مدد کی ہے۔

آنگھا نکم نے انڈین ریلوے کے کونکن ڈیویژن سے اس مدد کے لیے 12 مارچ کہا تھا۔ لیکن یہ کہانی اس وقت سرخیوں میں آئی جب محکمہ ریل نے جمعرات کے اس کے بارے میں ٹویٹ کیا۔

وہ اس وقت ریاست مہاراشٹر میں ہپّا ایکسپریس ٹرین میں سفر کر رہی تھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

انھوں نے بچی کی تصیر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا کہ 'اس بچي کو دودھ کی ضرورت ہے، یہ کونکن ریلوے میں ہپّا ایکسپریس میں سفر کر رہی ہے۔ برائے کرم سنیہا باپت سے اس بارے میں رابطہ کریں۔'

فورا ہی اس کے جواب میں کونکن ریولے نے ٹویٹ کیا کہ دودھ کا انتظام کولاڈ کے ریلوے سٹیشن پر کر دیا گیا ہے۔ اگلے کولاڈ سٹیشن پر کوچ سے باہر آکر دودھ لے لیں۔'

انڈین وزیر ریل سریش پربھو نے اس پر کونکن ریلے کی تعریف کرتے ہوئے ٹویٹر پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ انھوں نے بچی کا نام کارتکی بتاتے ہوئے کہا کہ کارتکی کتنی خوش نصیب ہے کہ چلتی ہوئی ٹرین میں اسے دودھ مہیا کیا گيا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں