شوہروں کی پٹائی کے لیے دلھنوں کو تحفہ

اجتماعی شادی تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption انڈیا میں جہیز کی لعنت کو روکنے کے لیے کئی جگہ اجتماعی شادی کا انتظام کیا جاتا ہے

انڈیا کی وسطی ریاست مدھیہ پردیش میں ایک اجتماعی شادی کے دوران سینکڑوں دلھنوں کو تحفے میں لکڑی کا بیٹ دیا گیا۔

مقامی زبان میں 15 انچ کے اس بیٹ کو 'مگدر' کہا جاتا ہے اور اس کا استعمال کپڑے دھونے کے لیے کیا جاتا ہے۔

دلھنوں سے کہا گیا ہے کہ شوہر کے جارحیت کی صورت میں وہ اسے بطور ہتھیار استعمال کریں۔

٭ انڈیا: شادی سے انکار، خاتون نے عاشق پر تیزاب پھینک دیا

٭ انڈیا کی دھتکاری ہوئی بیویاں

گرہا کوٹا میں تقریباً 700 دلھنوں کو تحفے میں دیے جانے والے بیٹ پر 'شرابیوں کی اصلاح کے لیے ہدیہ' لکھا ہوا ہے۔

ریاست کے ایک وزیر گوپال بھارگو نے کہا کہ وہ اس کے ذریعے گھریلو تشدد کے مسئلے کو سامنے لانا چاہتے تھے۔

انھوں نے خواتین سے کہا کہ مگدر استعمال کرنے سے پہلے وہ اپنے شوہروں کو سمجھانے کی کوشش ضرور کریں۔

تصویر کے کاپی رائٹ GOPAL BHARGAVA FACEBOOK PAGE
Image caption اس بیٹ پر یہ تحریر لکھی ہوئی ہے کہ یہ 'شرابیوں کی اصلاح کے لیے ایک تحفہ' ہے

لیکن اگر شوہر سننے سے انکار کرتا ہے تو انھیں اس کا استعمال کرنا چاہیے۔

بھارگو نے اپنے فیس بک کے صفحے پر بھی بیٹ لیے دلھنوں کی تصاویر ڈالی ہیں۔

خبررساں ادارے اے اے ایف پی کو انھوں نے بتایا کہ وہ گاؤں میں شرابی شوہروں کا شکار ہونے والی خواتین کی بڑھتی ہوئی تعداد پر فکر مند تھے۔

انھوں نے کہا: 'خواتین نے انھیں بتایا ہے کہ جب بھی ان کے شوہر شراب پیتے ہیں تو پرتشدد ہو جاتے ہیں۔ ان کی بچائی ہوئی رقم کو وہ ان سے چھین لیتے ہیں اور شراب پر خرچ کر دیتے ہیں۔'

بہر حال وزیر نے کہا کہ 'ان کا مقصد خواتین کو تشدد پر اكسانا نہیں ہے، بلکہ یہ بیٹ تشدد کو روکنے کے لیے ہدیہ ہے۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں