انڈیا: گوا میں پل گرنے سے دو افراد ہلاک اور متعدد لاپتہ

تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption یہ پل تقریبا 60 برس پرانا ہے اور بوسیدہ حالت کی بنا پر اس کے استعمال پر پابندی بھی لگا دی گئی تھی

انڈیا کی مغربی ریاست گوا میں پیدل چلنے والوں کے لیے مختص ایک پل کے گرنے سے دو افراد ہلاک ہوئے اور کئی دیگر افراد لاپتہ ہو گیِ ہیں۔

کراکرم کے پاس دریائے سنوردم میں ایک شخص نے چھلانگ لگا دی تھی جس کے لیے ایمرجنسی کے طور پر امدادی کارروائی کی جارہی تھی اور اسی کو دیکھنے کے لیے بہت سے لوگ اس پل پر جمع ہوئے تھے۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق جمعرات کی رات کو جب یہ پل گرا تو اس وقت اس پل پر تقریبا 50 افراد جمع تھے۔

اطلاعات کے مطابق یہ پل تقریبا 60 برس پرانا ہے اور بوسیدہ حالت کی بنا پر اس کے استعمال پر پابندی بھی لگا دی گئی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption راجناتھ سنگھ کی ٹویٹ

ایک مقامی پولیس افسر نے اخبار ہندوستان ٹائمز کو بتایا کہ امکان اس بات ہے کہ 'مزید لوگ گرے ہوئے پل کے نیچے پھنسے ہوسکتے ہیں۔'

وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کا کہنا ہے کہ وہ اس سلسلے میں ہونے والی امدای کاررائیوں کی نگرانی کر رہے ہیں۔

جنوبی گوا سے رکن پارلیمان نریندرا سوئیکر نے گوا ہیرالڈ نیوز پیپر کو بتایا ہے کہ یہ بڑا افسوس ناک واقعہ ہے۔

ان کا کہنا تھا: 'چونکہ حکومت اس پل کو پہلے ہی خطرناک پل قرار دے چکی ہے اور پل کے دونوں جانب اس کے استعمال نہ کرنے کے نوٹسز بھی لگے ہوئے ہیں اس لیے اس پل کو منہدم کردینا چاہیے۔'

انھوں نے بتایا کہ ابھی تو لا پتہ لوگوں کو پتہ کرنے کی کوشش کی جارہی اور فی الوقت وہی انتظایہ کی ترجیح ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں