اداکار سلمان خان کے بیان پر سوشل میڈیا میں شدید ردِ عمل

تصویر کے کاپی رائٹ DIVYAKANT SOLANKI
Image caption سلمان خان کی نئی فلم ٹیوب لائٹ بھی جنگ کے موضوع پر بنائی گئی ہے

بالی وڈ اداکار سلمان خان نے کہا ہے کہ جو لوگ جنگ کا حکم دیتے ہیں انہیں سرحد پر بھیجا جانا چاہیے۔

سلمان خان اپنی نئی فلم 'ٹيوب لائٹ' کی تشہیر کر رہے تھے۔ اس دوران انکا کہنا تھا 'مجھے لگتا ہے کہ جو لوگ جنگ کا حکم دیتے ہیں انہیں ہی سامنے کھڑا کر دینا چاہیے کہ یہ لو بھائی گن پکڑو، پہلے آپ لڑو۔ ایک دن کے اندر بند ہو جائے گی، انکے ہاتھ پیر کانپنے شروع ہو جائیں گے اور وہ براہ راست میز پر آکر بات چیت کرنے لگیں گے۔‘

سلمان خان کی نئی فلم ٹيوب لائٹ جنگ کے پس منظر پر مبنی ہے جس میں وہ ایک ایسے نوجوان کا کردار ادا کر رہے ہیں جس کا بھائی جنگ میں قیدی بنا لیا جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ @BeingSalmanKhan
Image caption سلمان کا کہنا ہے کہ جب بھی جنگ ہوتی ہے دونوں طرف کے لوگ مارے جاتے ہیں

سلمان نے یہ بھی کہا کہ جب بھی جنگ ہوتی ہے اس میں دونوں طرف کے لوگ مارے جاتے ہیں۔

بھارت اور پاکستان کے درمیان کشیدگی کے ماحول میں جہاں سلمان کے اس بیان کو امن کی حمایت کے طور پر دیکھا جا رہا ہے وہیں کچھ لوگ سوشل میڈیا پر انہیں تنقید کا نشانہ بھی بنا رہے ہیں۔

انڈیا کے نام سے ایک اکاؤنٹ سے لکھا گیا، 'سلمان کو یہ بھی مشورہ دینا چاہیے کہ بھارت کو پاکستان میں کس سے بات کرنی چاہیے نواز شریف سے، فوج کے سربراہ سے یا پھرحافظ سعید سے۔ کشمیر بھارت کا حصہ ہے تو پھر بات بھی کیا کرنی چاہیے۔ بات چیت ہارے ہوئے لوگوں کی زبان ہے'۔

گورو آر ڈی ایکس نے لکھا، بھارت پہلے کبھی جنگ نہیں کرتا. ہمارے فوجی شہید کرنے والا پاکستان ہے، اس وجہ سے پاکستان کے لیے محبت کا احساس رکھنے والا غدار ہے۔‘

وہیں ویكاريا بپن نے سلمان کو مشورہ دیتے ہوئے لکھا، 'قومی سلامتی کے معاملات میں مداخلت نہ کرو ہم آپ سے ایک اداکار کی شکل میں محبت کرتے ہیں اس لیے آپ جو ہیں وہی رہیں، دہشت گردی کے بارے میں فیصلہ کرنا آپ کا کام نہیں ہے'۔

انمیش دیو نے لکھا کہ 'ان کی نئی فلم آ رہی ہے اور یہ مفت پبلسٹی لینے کا وقت ہے۔'