انڈیا: راجستھان میں ذہنی معذور خاتون پر تشدد، دو افراد گرفتار

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption بھارت میں عورتوں کے خلاف تشدد کے واقعات بڑھتے جا رہے ہیں

بھارت کی ریاست راجستھان کے ناگور ضلع میں پولیس نے دو نوجوانوں کو ذہنی طور پر معذور خاتون کو بے رحمی سے پیٹنے کے جرم میں گرفتار کیا ہے۔

یہ واقعہ منگل کو پیش آیا لیکن اس کی خبر اس وقت عام ہوئی جب سوشل میڈیا پر کسی نے اس کی ویڈیو پوسٹ کی۔ اس ویڈیو میں دو نوجوان ایک خاتون کو ڈنڈے سے بے دردی سے مارتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں۔ یہ نوجوان اس خاتون کو ’جے شری رام‘ کہنے کے لیے مجبور کرتے ہیں جو وہ بمشکل کہہ پاتی ہیں۔

پولیس نے اس سلسلے میں پرکاش میگھوال اور شرون میگھوال نام کے دو نوجوانوں کو حراست میں لیا ہے۔ پولیس متاثرہ خاتون کو تلاش کر رہی ہے اور ان کے بیان کی بنیاد پر کوئی کارروائی کرے گی ۔ جس وقت یہ نوجوان اس خاتون کو پیٹ رہے تھے اس وقت وہاں کئی افراد کھڑے اس کا تماشہ دیکھ رہے تھے۔ پولیس ویڈیو بنانے اور اسے پوسٹ کرنے والے کو بھی تلاش کر رہی ہے۔

اسی طرح کا ایک اور ویڈیو گجرات سے سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا گیا ہے۔ اس میں درجنوں افراد ایک خاتون اور اس ایک آٹھ سالہ بچے کو مار رہے ہیں۔

اخبارات اور سوشل میڈیا کی خبروں کے مطابق یہ عورت دلت ہیں اور وہ ایک سکول میں مڈ ڈے میل کے شعبے میں کام کرتی ہیں۔ ان خبروں کے مطابق انہیں اس لیے پیٹا جا رہا تھا تاکہ وہ تنگ آ کر سکول کے باورچی خانے کا شعبہ چھوڑ دیں۔ یہ لوگ مبینہ طور پر باورچی خانے میں ایک دلت کے کام کرنے سے خوش نہیں تھے۔

اسی بارے میں