کابل: افغان خفیہ ایجنسی کے دفتر کے نزدیک خودکش حملہ، دس افراد ہلاک

کابل تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کابل میں حالیہ مہینوں میں دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے

کابل میں افغان خفیہ ایجنسی کے مرکزی دفتر کے قریب ہونے والے خود کش بم دھماکے کے نتیجے میں دس افراد ہلاک جبکہ پانچ افراد زخمی ہو گئے ہیں۔

شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

کابل میں ہسپتالوں کے امور کے ڈائریکٹر نے کہا کہ دھماکے سے مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہو سکتا ہے۔

کابل: مسجد میں بم حملہ، 20 افراد ہلاک

کابل کے فوجی ہسپتال پر حملہ

کابل کے سفارتی علاقے میں بم دھماکے میں 80 ہلاک

افغانستان میں حالیہ دنوں میں ایسے دہشت گردی کے واقعات کی تعداد میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

2015 سے افغانستان میں موجود تنظیم نے پچھلے ہفتے افغان خفیہ ایجنسی کے تربیتی ادارے کو بھی نشانہ بنایا تھا۔

اکتوبر میں شیعہ مسجد میں ہونے والے دھماکے میں 39 افراد ہلاک ہو گئے تھے جبکہ مئی کے مہینے میں کابل کے سفارتی علاقے میں ہونے والے واقعے میں 150 سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

یہ واقعہ طالبان کا 2001 میں کابل سے قبضہ ختم کرنے کے بعد سب سے تباہ کن حملہ تھا۔

اسی بارے میں