بہار: ریل گاڑی میں باغیوں کا حملہ، تین پولیس اہلکار ہلاک

Image caption بہار میں رواں برس نکسل باغیوں کی کارروائیوں میں بیس سے زیادہ افراد مارے جا چکے ہیں

بھارت کی ریاست بہار میں نکسل باغیوں کے حملے میں تین پولیس اہلکار ہلاک اور چار افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

مقامی پولیس کے مطابق یہ واقعہ ضلع مونگیر میں سنیچر کی شام اس وقت پیش آیا جب جمال پور ریلوے سٹیشن کے قریب ریل گاڑی میں موجود نکسل باغیوں نے پولیس اہلکاروں پر حملہ کر دیا۔

مونگیر کے ایس پی آفس اور جمال پور میں ریلوے پولیس نے اس واردات کی تصدیق کی ہے۔

مونگیر کے ایس پی سنجے کمار سنگھ کے مطابق صاحب گنج سے پٹنہ جانے والی انٹرسٹي ایکسپریس میں پہلے سے موجود باغیوں نے ٹرین کی حفاظت پر مامور اہلکاروں پر اس وقت حملہ کیا، جب ٹرین جمال پور ریلوے اسٹیشن سے قریب چار سے پانچ کلو میٹر پہلے ایک سرنگ سے گزر رہی تھی۔

انھوں نے بتایا کہ نکسلی خواتین کے لیے مخصوص ڈبے میں بیٹھے ہوئے تھے اور انھوں نے وہاں تعینات جوانوں پر پہلے چاقوؤں کے وار کیے اور پھرگولیاں چلائیں۔

اس واردات میں تین پولیس جوانوں کی ہلاکت اور تین دیگر جوانوں سمیت ایک مسافر کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

حملے کے بعد نکسل باغی اہلکاروں کے ہتھیار بھی لوٹ کر لے گئے۔

اس واقعے کے بعد متاثرہ ٹرین کو جمال پور سٹیشن پر ہی روک لیا گیا اور جس ڈبے میں حملہ ہوا تھا اسے کاٹ کر ٹرین سے الگ کر دیا گیا جبکہ باقی ٹرین کو پٹنہ کے لیے روانہ کر دیا گیا۔

خیال رہے کہ ریاست بہار میں رواں برس نکسل باغیوں کی کارروائیوں میں بیس سے زیادہ افراد مارے جا چکے ہیں جن میں سکیورٹی اہلکاروں کے علاوہ عام شہری بھی شامل ہیں۔

اسی بارے میں