کیجریوال دہلی کے ساتویں وزیر اعلی

Image caption کیجری وال وی آئی پی کلچر کے خلاف حلف لینے علامتی طور پر میٹرو سے رام لیلا میدان پہنچے

بھارتی دارالحکومت دہلی کے تاریخی رام لیلا میدان میں عام آدمی پارٹی کے رہنما اروند کیجریوال نے دہلی کے ساتویں وزیرِ اعلیٰ کے طور پر سنیچر کو حلف اٹھا لیا ہے۔

کیجریوال پارٹی کے کوشامبی دفتر سے میٹرو کے ذریعہ رام لیلا میدان پہنچے۔ وہ وی آئي پی کلچر کے خلاف رہے ہیں ہیں اور ان کا یہ علامتی قدم اسی کا غماز ہے۔

دہلی کے نائب گورنر نجیب جنگ نے کیجریوال سے حلف لیا۔ ان کے ساتھ ارکانِ اسمبلی منیش سیسودیا، سومناتھ بھارتی، ستیندر جین، کماری راکھی برلا، گریش سونی اور سوربھ بھاردواج نے بھی حلف لیے۔

حلف لینے کے بعد کیجریوال نے کہا ’یہاں عام آدمی کی جیت ہوئی ہے۔ یہ حلف در اصل دہلی کے عوام نے لیا ہے۔ یہ قدرت کا کرشمہ ہی ہے کہ دو سال پہلے ہم یہ سوچ بھی نہیں سکتے تھے کہ ہم اس جنگ کو جیت پائیں گے۔‘

انہوں نے کہا ’اروند کیجریوال یہ جنگ اکیلے نہیں لڑ سکتا۔ ہمارے پاس تمام مسائل کا حل نہیں ہے اور نہ ہی ہمارے پاس کوئی جادو کی چھڑی ہے لیکن دہلی کے عوام مل کر مسائل کا حل نکال سکتے ہیں۔‘

رام لیلا میدان میں موجود بی بی سی کے زبیر احمد نے بتایا ’حلف برداری میں بڑی تعداد میں لوگ موجود تھے۔ پارٹی کے حامیوں نے عام آدمی پارٹی کی ٹوپی پہن رکھی تھی۔

کیجریوال کے گاؤں سوني اور کھیڑا سے متعد افراد وہاں موجود تھے اور ان کی آمد مسلسل جاری تھی۔

نامہ نگار کے مطابق لوگوں کا کہنا ہے کہ 15 اگست اور 26 جنوری کو بھی اتنا رش نہیں ہوتا، جتنا رش اس موقع پر ہے۔

کیجریوال کے ساتھ وزیر کے عہدے کا حلف لینے والے عام آدمی پارٹی کے چھ رکن اسمبلی بھی میٹرو سے ہی رام لیلا میدان پہنچے۔

بدعنوانی کے خلاف تحریک سے وجود میں آنے والی کیجریوال کی عام آدمی پارٹی نے حکمراں کانگریس کو شکست دے کر اپنے سیاسی سفر کا آغاز کیا تھا۔

اس تقریب سے پہلے کیجریوال نے کہا ’میں وزیر اعلی نہیں بن رہا ہوں بلکہ دہلی کے عوام وزیرِاعلی بن رہے ہیں۔‘

واضح رہے کہ سنہ 2010 میں بدعنوانی کے خلاف شروع ہونے والی کے تعلق سے کئی بڑی اور تاریخی ریلیوں کا انعقاد بھی رام لیلا میدان میں ہی کیا گیا تھا۔

اسی بارے میں