’بھارت کے لیے بیٹنگ کرتا رہوں گا‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption صدارتی محل کے دربار ہال میں منعقد تقریب میں 40 سالہ تندولكر اور نامور سائنسی پروفیسر سينار راؤ کو بھارت رتن سے نوازا گیا

بھارت کے صدر پرناب مکھرجی نے سابق کرکٹر سچن تندولکر کو بھارت کا اعلیٰ ترین سویلین ایوارڈ بھارت رتن دیا ہے۔

بھارت رتن حاصل کرنے کے بعد سچن تندولكر نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’عام آدمی کے چہرے پر مسکراہٹ لانے کے لیے میں زندگی کے تمام پہلوؤں میں بھارت کے لیے بیٹنگ کرتا رہوں گا۔‘

انہوں نے کہا کہ ’کرکٹ چھوڑنے کے باوجود میں بھارت کے لیے بیٹنگ کرتا رہوں گا اور لوگوں کے چہرے پر خوشیاں لانے کی کوشش کرتا رہوں گا۔‘

انہوں نے کہا کہ ’بھارت رتن حاصل کرنا میرے لیے سب سے بڑا اعزاز ہے۔ میں اس خوبصورت ملک میں پیدا ہونے پر فخر کرتا ہوں اور سالوں سے یہاں کے لوگوں سے ملنے والے پیار اور حمایت کے لیے ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔‘

صدارتی محل کے دربار ہال میں منعقد تقریب میں 40 سالہ تندولكر اور نامور سائنسی پروفیسر سينار راؤ کو بھارت رتن سے نوازا گیا۔

تقریب میں نائب صدر حامد انصاری، مرکزی وزراء، سچن کی بیوی انجلي اور ان کی بیٹی سارا موجود تھیں۔

سچن تندولكر نے گذشتہ سال 16 نومبر کو بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لی تھی۔ وہ بھارت رتن حاصل کرنے والے پہلے کھلاڑی ہیں۔

تندولكر نے کہا کہ ’میں نے دو ماہ پہلے جو کہا تھا وہ دوبارہ کہنا چاہوں گا، یہ اعزاز میں اپنی ماں کے لیے وقف کرنا چاہوں گا اور ساتھ ہی بھارت کی ہر اس ماں کو وقف کرنا چاہوں گا جنہوں نے اپنے بچوں کے خواب پورے ہونے کی دعا کی ہے۔‘

انہوں نے پروفیسر راؤ کو بھی نوجوانوں کو سائنسی بننے کی ترغیب دینے کے لیے مبارکباد دی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption تندولکر نے 1989 میں سولہ سال کی عمر میں اپنا پہلا انٹرنیشنل میچ کھیلا

سچن تندولکر نے اپنے چوبیس سالہ کریئر میں 34,000 سے زائد رنز بنائے اور ان کی کامیابی کی ایک اہم وجہ ون ڈے اور ٹیسٹ میں ان کا مستقل مزاجی کے ساتھ رنز بنانا ہے۔

انہوں نے کسی دوسرے کرکٹر کے مقابلے میں سب سے زیادہ ٹیسٹ اور ون ڈے میچ کھیلے اور سب سے زیادہ رنز بنائے۔ انہوں نے بھارت کی جانب سے صرف ایک ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلا ہے۔

تندولکر نے 1989 میں سولہ سال کی عمر میں اپنا پہلا انٹرنیشنل میچ کھیلا اور اپنے کریئر کے دوران کئی ریکارڈ اپنے نام کیے جس میں سب سے زیادہ قابل ذکر ان کا سو سنچریاں بنانے کا ریکارڈ ہے۔ انہوں نے مارچ 2012 میں بنگلہ دیش کے خلاف ڈھاکہ میں 114 رنز بنا کر اپنے کریئر کی سوویں سنچری بنائی تھی۔

انٹرنیشنل کرکٹ میں آسٹریلیا کے سابق کپتان رکی پونٹنگ 71 سنچریوں کے ساتھ دوسرے نمبر ہر ہیں۔ کئی کھلاڑیوں اور ماہرین کا کہنا ہے کہ شاید یہ ریکارڈ کبھی نہیں ٹوٹ سکے گا۔

اسی بارے میں