نئی دہلی: کیجریوال نے استعفی دے دیا

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption اروند کیجریوال انچاس روز تک دہلی کے وزیر اعلیٰ رہے

چند ماہ پہلے ملک کی دو بڑی جماعتوں کو ریاستی انتخابات میں ہرا کر دہلی کا وزیر اعلیٰ بننے والے اروند کیجریوال نے کرپشن بل منظور نہ ہونے پر اپنے عہدے سے استعفی دیا ہے۔اروند کیجریوال نے گذشتہ سال 28 دسمبر کو نئی دہلی کے ساتویں وزیرِ اعلیٰ کی حیثیت سے حلف اٹھایا تھا۔

اروند کیجریوال کی جماعت کو ریاستی اسمبلی کے 70 میں سے 28 ارکان کی حمایت تھی لیکن اس قانون منظور کرانے کے لیے دوسری جماعتوں کی حمایت درکار تھی جنہوں نے بل کی حمایت سے انکار کیا۔

کیا یہ نئی سیاست کا آغاز ہے؟

عام آدمی پارٹی: بھارت میں نئی سیاست کی علامت؟

حزب اختلاف کی جماعتوں نے بدعنوانی روکنے کے بل کی یہ کہہ کر مخالفت کی کہ اس بل کو اسمبلی میں پیش کرنے سے پہلے وفاقی حکومت سے اس کی منظوری نہیں لی گئی ہے۔

اگر یہ قانون منظور ہو جاتا تو ایک ایسا آزاد ادارہ وجود میں آتا جو سیاستدانوں اور سرکاری افسران کی مبینہ کرپشن کی تحقیقات کر سکتا۔

حزب اختلاف کی جماعتوں کا موقف تھا کہ عام آدمی پارٹی ایک ایسا قانون منظور کروانے کی کوشش کر رہی تھی جس کی وفاقی حکومت نے اجازت نہیں دی۔ عام آدمی پارٹی نے کرپشن بل کو ریاستی اسمبلی میں پیش کرنے سے پہلے مسودے کی وفاقی حکومت سے منظوری لینے سے انکار کیا تھا۔

خیال رہے کہ بھارت میں بدعنوانی کے خلاف تحریک چلانے والی عام آدمی پارٹی کے سربراہ کیجریوال نے دو جنوری کو ریاستی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا تھا۔

70 رکنی ایوان میں اس پارٹی کے 28 ارکان ہیں لیکن کانگریس کے آٹھ اراکین نے بھی ان کی حمایت کی تھی۔

اروند کیجروال نے انچاس روز تک دہلی کے وزیر اعلیٰ کے طور پر کام کیا۔

اروند کیجروال نے بھارتی وزیر داخلہ کو ایک خط کے ذریعے اس حکم کو واپس لینے کا مطالبہ کیا تھا جس کے تحت دہلی کی اسمبلی میں کسی بھی قانونی مسودے کو پیش کرنے سے پہلے وفاقی حکومت سے پیشگی اجازت لینا لازم ہے۔

جمعہ کو اپنی پارٹی کے ہیڈکوارٹر کے باہر اپنے سینکڑوں حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے اروند کیجریوال نے کہا کہ ملک کی دو بڑی جماعتیں، بھارتی جنتا پارٹی اور حکمران کانگریس پارٹی نے بدعنوانی کو روکنے کے قانون کو منظور نہیں ہونے دیا۔

انہوں نے کہا کہ میری کابینہ نے فیصلہ کیا ہے کہ ہم اقتدار سے علیحدہ ہو جانا چاہیے اور یہ ہے میرا استعفیٰ ہے۔

اسی بارے میں