کابل: الیکشن کمیشن کی عمارت پر حملہ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption افغانستان میں5 اپریل کو صدارتی انتخاب ہونے کو ہے

افغانستان میں پولیس کا کہنا ہے کہ کابل میں افغان الیکشن کمیشن کی عمارت میں مسلح افراد نے حملہ کیا ہے۔

کابل سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق حملہ آور ایک قریبی عمارت میں داخل ہو گئے ہیں اور وہ الیکشن کمیشن کی عمارت پر خود کار ہتھیاروں سے فائرنگ کر رہے ہیں۔

اس سال افغانستان سے نیٹو افواج کا انخلا ہونے والا ہے۔ پانچ اپریل کو ملک کے صدارتی انتخاب میں 11 امیدوار شریک ہوں گے۔

ملک میں انتخابات کے دوران سکیورٹی سنگین مسئلہ ہے کیونکہ طالبان نے انتخابی مہموں کو نشانہ بنانے کی دھمکی دے رکھی ہے۔ اس کے علاوہ بدعنوانی بھی اہم مسئلہ ہے۔

2009 میں ہونے والے گذشتہ انتخابات میں دھاندلی کے شدید الزامات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

یاد رہے کہ کابل میں ایک روز قبل ہی ایک امریکی خیراتی ادارے کے زیرِ استعمال گیسٹ ہاؤس پر حملہ پانچ افراد نے حملہ کیا جس میں پانچوں حملہ آوروں کو ہلاک کر دیا گیا۔ حکام کا کہنا تھا کہ اس کارروائی کے دوران ایک کمسن افغان بچی بھی اس وقت ہلاک ہوئی ہے جب ایک خودکش حملہ آور نے مہمان خانے کے دروازے پر گاڑی میں دھماکہ کیا۔

افغان حکومت کے ایک وزیر نے بی بی سی کو بتایا تھا کہ مہمان خانے میں موجود 31 غیرملکیوں کو بحفاظت نکال لیا گیا تھا اور ان میں خیراتی ادارے روٹس فار پیس کے چھ ملازمین بھی شامل تھے۔

اسی بارے میں