افغان جنگ ’ذمہ دارانہ انجام‘ کو پہنچ رہی ہے: اوباما

Image caption اس سال کے آخر تک افغان اپنے ملک کی سکیورٹی کی مکمل ذمہ داری لے لیں گے اور افغانستان میں امریکہ کی جنگ ایک ذمہ دارانہ انجام کو پہنچ جائے گی: اوباما

صدر براک اوباما نے افغانستان میں تعینات امریکی فوجیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کی تاریخ کی طویل ترین جنگ 2014 کے اختتام تک ’ذمہ دارانہ انجام‘ تک پہنچ جائے گی۔

کابل کے قریب بگرام فوجی اڈے کا غیر اعلانیہ دورہ کرتے ہوئے امریکی صدر نے جب فوجیوں سے خطاب کیا تو ان کا پرجوش خیرمقدم کیا گیا۔

امریکی صدر کا افغانستان کا یہ دورہ امریکہ میں میموریل ڈے سے ایک روز قبل کیا گیا ہے۔ اس روز امریکہ میں عوام جنگ میں ہلاک ہوئے اپنے فوجیوں کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہیں۔

افغانستان سے غیر ملکی فوجیوں نے 2014 کے اختتام تک انخلا کرنا ہے۔

امریکہ کی کوشش ہے کہ وہ افغانستان میں ایک چھوٹی فوج چھوڑ کر جائے تاہم اس کا انحصار آئندہ ماہ ہونے والے افغان صدارتی انتخاب کے دوسرے مرحلے میں کامیابی پانے والے امیدوار پر ہوگا۔

باہمی سکیورٹی کے معاہدے پر دستخط کرنے سے صدر حامد کرزئی انکار کر چکے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ صدر اوباما نے حامد کرزئی کو فوجی اڈے پر آنے کی دعوت دی تھی تاہم صدر کرزئی کا کہنا تھا کہ وہ صدر اوباما سے صرف اپنے صدارتی محل میں ملاقات کریں گے۔

اوباما نے فوجیوں کو ان کی خدمات کے لیے امریکی عوام کا شکریہ پیش کیا اور وعدہ کیا کہ وہ زخمی ہونے والے فوجیوں کے علاج کی سہولیات بہتر کریں گے۔

انھوں نے کہا ’اس سال کے آخر تک افغان اپنے ملک کی سکیورٹی کی مکمل ذمہ داری لے لیں گے اور افغانستان میں امریکہ کی جنگ ایک ذمہ دارانہ انجام کو پہنچ جائے گی۔‘

انھوں نے کہا کہ امریکہ افغانستان کے اپنے تعلقات میں تسلسل رکھے گا بشرطہ کہ نئے افغان صدر باہمی سکیورٹی کے معاہدے پر دستخط کر دیں۔

Image caption براک اوباما کا افغانستان کا یہ دورہ غیر اعلانیہ تھا

انتخابات کے دوسرے مرحلے میں مدِمقابل دونوں امیدواروں نے اس معاہدے کی حمایت کا اعلان کر رکھا ہے۔

امریکی صدر نے کہا کہ افغانستان ایک اہم موڑ پر ہے اور امریکی فوجوں نے القاعدہ کو تباہ کر دیا ہے، اور امریکہ صحت عامہ اور تعلیم کے ساتھ ساتھ سکیورٹی کا بہتر نظام چھوڑ کے جا رہا ہے۔

کابل میں بی بی سی کے نامہ نگار ڈیوڈ لیون نے بتایا کہ صدر اوباما کی تقریر کا اختتام ورلڈ ٹریڈ سنٹر پر 9/11 کے روز جلتے ہوئے امریکی پرچم کی تصویر کے ساتھ ہوا۔

افغانستان میں 13 سالہ امریکی جنگ میں 2100 سے زیادہ امریکی فوجی ہلاک اور ہزاروں زخمی ہوئے ہیں۔ غیر ملکی افواج کے انخلا کے پیشِ نظر طالبان نے اپنی کارروائیاں تیز کر دی ہیں۔

اسی بارے میں