مودی کو ماں کے ساتھ دیکھ کر نواز شریف کی ماں جذباتی

تصویر کے کاپی رائٹ Maryam Nawaz Sharif
Image caption میاں نواز شریف اپنی والدہ کے ساتھ جو تصویر ان کی صاحبزادی مریم نواز شریف نے بھجوائی

بھارت کے 15ویں وزیر اعظم کے طور پر نریندر مودی کی حلف برداری کی تقریب میں پاکستانی وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کی موجودگی اور دونوں وزرائے اعظم کے درمیان اُن کی ماؤں کے بارے میں بات چیت پر انتہا دلچسپی ظاہر کی جا رہی ہے۔

جہاں پاکستانی وزیراعظم میاں نواز شریف کے والد کا ان کی زندگی میں کردار اور اثر بہت زیادہ موضوعِ بحث رہا ہے وہیں پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ ان کی والدہ کا ذکر آیا ہے۔

اس خبر کے بعد ہم نے وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز شریف سے ٹوئٹر پر رابطہ کیا تو انہوں نے اذراہِ کرم بی بی سی کے قارئین کے لیے میاں نواز شریف کی ان کی والدہ کے ساتھ ایک تصویر خصوصی طور پر بھجوائی ہے جو آپ اوپر دیکھ سکتے ہیں۔

حلف لینے کے بعد مودی نے ٹوئٹر کے ذریعے نواز شریف کے ساتھ ہونے والی اپنی بات چیت شيئر کی۔ بہر حال انھوں نے ٹوئیٹ میں بات چیت کے ذاتی اور جذباتی پہلو کو ہی تحریر کیا۔

نریندر مودی کی جانب سے کی جانے والی یہ چار ٹویٹس اب 10871 بار ری ٹویٹ اور 17132 بار فیورٹ یعنی پسند کی جاچکی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption مودی کی تاریخی کامیابی کے بعد ان کی ماں نے انھیں مٹھائی کھلائي اس منظر نے بہت سے لوگوں کو جذباتی کر دیا

دیر رات کیے جانے والے اپنے کئی ٹویٹس میں نریندر مودی نے پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف کے ساتھ اپنی بات چیت کے کچھ حصے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر پیش کیا۔

نریندر مودی نے لکھا: ’آج شام وزیر اعظم نواز شریف نے بات چیت کے دوران انتہائی جذباتی باتیں کیں۔ نواز شریف جی نے بتایا کہ وہ اسلام آباد میں رہتے ہیں لیکن اپنی ماں سے ملنے ہفتے میں ایک بار ضرور جاتے ہیں۔‘

مودی نے ٹویٹ میں کہا: ’اس بار جب وہ اپنی ماں کے ساتھ کھانا کھا رہے تھے تو انھوں نے ٹی وی پر میری ماں کو مجھے مٹھائی کھلاتے ہوئے دیکھا۔ اس ویڈیو نے شریف جی اور ان کی ماں کو بہت جذباتی کردیا۔‘

انھوں نے مزید لکھا: ’انھوں (نواز شریف) نے مجھے بتایا کہ اس ویڈیو کو دیکھ کر ان کی ماں فرط جذبات سے مغلوب ہو گئیں۔‘

واضح رہے کہ پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف سمیت جنوبی ایشیائی ممالک کے کئی سربراہان پیر کی شام نئی دہلی کے ایوان صدر کے صحن میں نریندر مودی کی حلف برداری کی تقریب میں شامل ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption منگل کو نئی دہلی میں بھارت اور پاکستان کے وزرائے اعظم کے درمیان باضابطہ بات چیت ہو رہی ہے

منگل کو نواز شریف اور بھارت کے نئے وزیر اعظم نریندر مودی کے درمیان باضابطہ بات چیت ہو نے والی ہے۔

دونوں ہی ممالک میں ان دونوں سربراہان مملکت کے درمیان ہونے والی بات چیت کو انتہائی تجسّس کے ساتھ دیکھا جا رہا ہے اور اس میں عوام کی دلچسپی بہت زیادہ ہے۔

نئی دہلی کے لیے روانہ ہونے سے پہلے پاکستان میں نواز شریف نے کہا تھا کہ وہ ’امن کا پیغام لے کر بھارت جا رہے ہیں۔‘

اسی بارے میں