بھارت: اتراکھنڈ میں بارشوں سے 27 ہلاکتیں

تصویر کے کاپی رائٹ Ajay Rawat
Image caption اتراکھنڈ پہاڑی ریاست ہے جہاں بارش کے موسم میں مٹی کے تودے گرنے کے واقعات عام ہیں

بھارت کی شمالی ریاست اتراکھنڈ میں شدید بارش کے نتیجے میں مٹی کے تودے گرنے سے 27 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

دوسری جانب ملک کی شمال مشرقی ریاست بہار میں مسلسل بارش کے نتیجے میں دریاؤں میں پانی کی سطح بلند ہو گئی ہے اور درجنوں گاؤں زیر آب آ گئے ہیں۔

اتراکھنڈ میں حکام نے آنے والے 24 گھنٹوں کے دوران مزید بارش کی وارننگ جاری کی ہے اور وہاں سے مقامی صحافی نے بتایا ہےکہ ابھی بھی بارش جاری ہے۔

جمعرات کی رات سے جاری بارش نے ریاست کے کئی علاقوں میں تباہی مچائی ہے۔

حکام نے کہا ہے کہ ریاست کے پوڑی ضلع میں بارش کی وجہ سے مٹی کے تودے گرنے سے 14 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

دوسری جانب ریاستی دارالحکومت دہرہ دون میں مٹی کے تودے گرنے سے تین مکانات ملبے میں دب گئے تھے جہاں سے پانچ افراد کی لاشیں باہر نکال لی گئی ہیں۔

مقامی سینيئر صحافی شیو جوشی نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ انتظامیہ کی جانب سے 27 ہلاکتوں کی تصدیق کی گئی ہے۔

اس کے ساتھ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ حکام نے اس میں مزید ہلاکتوں کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ NIRAJ SAHAI
Image caption بہار کے مختلف اضلاع کے بہت سے گاؤں بارش کی وجہ سے مشکلات کا شکار ہیں

حکام کا کہنا ہے کہ بارش کی وجہ سے ریاست کے دور افتادہ پہاڑی علاقوں سے پوری تفصیلات موصول نہیں ہو سکی ہیں۔

اس سے پہلے ریاست کے وزیراعلیٰ ہریش راوت نے ضلع مجسٹریٹ کو متاثرہ علاقوں میں جنگی پیمانے پر امدادی کارروائیوں کی ہدایت کی تھی۔

انھوں نے کہا کہ متاثرہ علاقوں کے لیے قدرتی آفات سے نمٹنے کے لیے قائم مرکزی اور ریاستی دونوں سطح کی ٹیمیں روانہ ہو چکی ہیں۔

خبر رساں ادارے آئی اے این ایس کے مطابق بہار کے مختلف اضلاع بگہا،گوپال گنج، مدھوبنی، سیتامڑھی، سوپول، سہرسا، کھگڑیا، دربھنگہ اور مدھیہ پورہ کے 100 سے زیادہ گاؤں زیر آب آ گئے ہیں۔

واضح رہے کہ بہار کے ان اضلاع میں ہر سال موسون کے موسم میں سیلاب آتے ہیں۔

گذشتہ سال اتراکھنڈ میں بارش اور اچانک سیلاب کے نتیجے میں سینکڑوں افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں