مودی کی تعریف پر شششی تھرور ترجمان کے عہدے سے فارغ

ششی تھرور تصویر کے کاپی رائٹ PIB
Image caption کچھ کانگریس رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ششی تھرور بی جے پی کے نزدیک جا رہے ہیں

بھارت کی سیاسی جماعت کانگریس نے پیر کو پارٹی رہنما ششی تھرور کو کُل ہند کانگریس کمیٹی (اے آئی سی سی) کے ترجمان کے عہدے سے ہٹا دیا ہے۔

وزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کرنے پر تھرور کے خلاف پارٹی کی کیرالہ یونٹ نے ہائی کمان سے تادیبی کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے شکایت کی تھی۔

ششی تھرور نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے شروع کی جانے والی ’صاف بھارت مہم‘ کی تعریف کی تھی۔

مودی نے انہیں اس مہم میں شریک ہونے کی دعوت بھی دی تھی اور ششی تھرور نے ان کی تعریف کی تھی۔

این ڈی ٹی وی ڈاٹ کام پر اپنے ایک کالم میں ششی نے وزیراعظم نریندر مودی کی تعریف کی تھی۔

کچھ کانگریس رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ششی تھرور بی جے پی کے نزدیک جا رہے ہیں۔

حالانکہ تھرور نے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ انہیں کانگریس کا رکن ہونے پر فخر ہے اور انہوں نے کبھی بھی’ہندوتو کے ایجنڈے‘ کی حمایت نہیں کی ہے۔

ششی تھرور نےایک پریس ریلز میں کہا ہے کہ انہیں کیرالہ کانگریس کی شکایت پر اپنی بات سامنے رکھنے کا موقع ملتا تو اچھا رہتا۔

انہوں نے کہا کہ وہ کانگریس کے وفا دار کارکن ہیں اور ترجمان کے عہدے کی ذمہ داریوں سے آزاد کرنے کے پارٹی صدر کے فیصلے کو قبول کرتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا، ’میری جانب سے یہ معاملہ اب ختم ہے اور میں اس بارے میں اب کوئی ردِ عمل نہیں دینا چاہتا۔‘

کانگریس کے سینئیر رہنما غلام نبی آزاد کا کہنا تھا پارٹی کے ترجمان کا کام پارٹی کا موقف پیش کرنا ہوتا ہے نہ کہ اپنی رائے دینا۔

اسی بارے میں