چین: کوئلے کی کان میں آتشزدگی سے 24 ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption سنہ 2010 میں کانوں کے حفاظتی معیار کو بلند کرنے کے لیے قوانین منظور کیے گئے

چین کی شمال مشرقی ریاست لیوننگ میں واقع ایک کان میں آتشزدگی کے واقعے میں کم از کم 24 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

سرکاری میڈیا نے خبر دی ہے کہ اس واقعے میں 54 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

سرکاری خبررساں ایجنسی زنہوا کے مطابق اس کان کا نظم و نسق حکومتی کمپنی لیوننگ فوکژن کول کارپوریشن کے زیر انتظام تھا۔

حکام کا کہنا کہ اس اندرونی آتشزدگی کی وجہ فوری طور پر معلوم نہ ہو سکی تاہم کمپنی کا کہنا ہے کہ اب ریسکیو آپریشن ختم ہو چکا ہے۔

اطلاعات کے مطابق چین کی کانوں میں اس طرح کے حادثات عام ہیں اور انھیں دنیا کی خطرناک ترین کانیں کہا جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Xinhua
Image caption چین میں تقریبا 25 ہزار کانیں ہیں جن میں نجی کانیں بھی شامل ہیں

کہا جاتا ہے کہ ہر سال اس قسم کے حادثات میں سینکڑوں افراد ہلاک ہو جاتے ہیں۔

صرف سنہ 2011 میں سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کان حادثوں میں 1973 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

بہرحال حالیہ برسوں میں چین کی کانوں میں حفاظتی انتظامات میں بہتری آئی ہے کیونکہ اب حکام حفاظتی قوانین و ضوابط کو سختی کے ساتھ نافذ کرنے لگے ہیں۔

چین میں تقریبا 25 ہزار کانیں ہیں جن میں نجی کانیں بھی شامل ہیں اور سنہ 2010 میں نافذ کیے جانے والے قوانین کے پیش نظر ان میں سے تقریبا 1250 کانوں کو بند کر دیا گيا تھا۔

اسی بارے میں