بھارت میں ٹوائلٹس کے استعمال کی نگرانی کی مہم

تصویر کے کاپی رائٹ WSUP GMB AKASH PANOS
Image caption بھارت کی نصف آبادی کو بیت الخلا کی سہولیات میسر نہیں

بھارتی حکومت نے ایک ملگ گیر مہم چلانے کا اعلان کیا ہے جس میں اس بات کا جائزہ لیا جائے گا کہ آیا عوام ٹوائلٹ استعمال کر رہے ہیں یا نہیں۔

یہ مہم وزیرِ اعظم نریندر مودی کی جانب سے ملک میں شروع کی گئی صفائی ستھرائی کی اس ملک گیر مہم کا حصہ ہے جس کا آغاز تین ماہ قبل ہوا تھا۔

’صاف بھارت‘ نامی یہ مہم آئندہ پانچ سال تک جاری رہے گی اور مودی نے اس عرصے میں ملک بھر سے گندگی مٹانے کا عہد کیا ہے۔

ٹوائلٹ کے استعمال کی نگرانی کی مہم چلانے کے لیے سینیٹری انسپکٹروں کی مدد لی جائے گی جو گھر گھر جا کر سروے کریں گے اور یہ نتائج موبائل فونز اور ٹیبلٹ کمپیوٹرز کی مدد سے اکٹھے کیے جائیں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارتی وزیراعظم نے کھلے میدانوں کو عوامی ٹوئلٹ میں تبدیل کرنے کے رواج کا خاتمہ کرنے کا اعلان کیا تھا

بھارتی حکومت کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ ان ابتدائی جائزوں سے اگلا قدم ہے جن میں ٹوائلٹس کی تعمیر کی نگرانی کی گئی تھی۔

حکومت کا کہنا ہے کہ اس نے اکتوبر سے اب تک پانچ لاکھ مکانات میں ٹوائلٹس تعمیر کر کے دیے ہیں۔

یاد رہے کہ بھارت کی نصف آبادی کو بیت الخلا کی سہولیات میسر نہیں اور بھارتی وزیراعظم نے رواں برس یومِ آزادی کے موقع پر اپنے خطاب میں کہا تھا کہ وہ کھلے میدانوں کو عوامی ٹوئلٹ میں تبدیل کرنے کے رواج کا خاتمہ کریں گے۔

مودی نے ہرسکول میں لڑکوں اور لڑکیوں کے لیے علیحدہ علیحدہ ٹوائلٹوں کی سہولیات فراہم کرنے کا بھی وعدہ کیا تھا اور کہا تھا کہ آئندہ چار سال میں بھارت کے ہرگھر کے اندر ایک ٹوائلٹ لگایا جائے گا۔

اسی بارے میں