بنگلہ دیش: بس پر بم حملہ، سات مسافر جل کر ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ unk
Image caption پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اس حملے کے بعد قریبی دیہاتوں پر چھاپے مارے گئے ہیں

بنگلہ دیش میں ایک مسافر بس پر پیٹرول بم کے حملے میں سات افراد ہلاک اور پندرہ زخمی ہوگئے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ منگل کو علی الصبح ملک کے مشرقی حصے میں چوداگرم نامی قصبے کے قریب پیش آیا ہے۔

حکام کے مطابق بس پر اس وقت حملہ کیا گیا جب اس میں سوار زیادہ تر افراد سو رہے تھے۔

بنگلہ دیش میں گذشتہ ماہ حکومت مخالف مظاہروں کے آغاز کے بعد سے بسوں اور گاڑیوں پر حملوں میں اضافہ ہوا ہے۔

ان مظاہروں کی کال اپوزیشن کی رہنما خالدہ ضیا نے انتخابات کے ایک برس کی تکمیل پر دی تھی۔

تاہم خالدہ ضیا کا کہنا ہے کہ ان کی جماعت بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی اور اس کی اسلام پسند اتحادی جماعتیں اس حملے کی ذمہ دار نہیں ہیں۔

مقامی پولیس کے سربراہ توتل چکرورتی نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ ’سات مسافر اس وقت زندہ جل گئے جب چار بجے کے قریب پیٹرول بم بس میں پھینکا گیا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ 15 زخمیوں میں سے پانچ کی حالت نازک ہے اور انھیں علاج کے لیے ڈھاکہ منتقل کر دیا گیا ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اس حملے کے بعد قریبی دیہاتوں پر چھاپے مارے گئے ہیں لیکن تاحال کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے۔

بنگلہ دیش میں پولیس نے مظاہروں کے آغاز کے بعد سے اب تک اپوزیشن کے سات ہزار حامیوں کو گرفتار کیا ہے۔

اسی بارے میں