افغانستان:برفانی تودے گرنے سے 90 افراد ہلاک

Image caption کچھ دن قبل صوبہ بدخشاں میں بھی برفانی تودہ گرنے سے ہلاکتیں ہوئی تھیں

حکام کے مطابق افغانستان کے شمالی علاقوں میں برفانی تودے گرنے سے 90 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

صوبہ پنج شیر اور سلنگ پاس کے علاقوں میں بھاری برف باری سے ذرائع آمدورفت متاثر ہوئے ہیں اور برفانی تودے گرنے سے کئی دیہات کا ملک کے دیگر علاقوں سے رابطہ منقطع ہو گیا ہے۔

صوبے کے قائم مقام گورنر عبدالرحمان نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ ان کے صوبے میں ابھی بھی درجنوں افراد برف میں پھنسے ہوئے ہیں۔

خیال رہے کہ اس علاقے میں اکثر برفانی تودے گرتے رہتے ہیں اور 2010 اور 2012 میں بھی ان کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر ہلاکتیں ہوئی تھیں۔

کچھ اطلاعات کے مطابق علاقے میں لوگ اپنی مدد آپ کے تحت برف میں دبے ہوئے لوگوں کو نکالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ خراب موسم کی وجہ سے امدادی سرگرمیوں میں مشکل پیش آرہی ہے۔

شدید برف باری کی یہ حالیہ لہر ملک میں نسبتاً معتدل اور خشک موسم سرما کے بعد آئی ہے۔

اسی بارے میں