بنگلہ دیش میں طوفان سے تباہی، کم از کم 22 ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption طوفان سے بڑی تعداد میں مکانات کو نقصان پہنچا اور بجلی کی فراہمی بھی معطل ہوگئی

بنگلہ دیش میں اتوار کو آنے والے شدید طوفانِ بادوباراں سے کم از کم 22 افراد ہلاک اور 50 سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ طوفان کی وجہ سے پانچ اضلاع بری طرح متاثر ہوئے ہیں اور ڈھاکہ کے شمال میں واقع ضلع بوگرا میں سب سے زیادہ جانی و مالی نقصان ہوا ہے۔

مرنے والوں میں عورتیں اور بچے بھی شامل ہیں جبکہ زخمیوں کو مقامی ہسپتالوں میں داخل کروایا گیا ہے۔

خبر رساں ایجنسی روئٹرز کے مطابق، حکام نے مرنے والوں کی تعداد بڑھنے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

بوگرا کے ضلعی ایڈمنسٹریٹر شفیق الرضا بسواس کا کہنا ہے کہ ضلعے میں کم سے کم 14 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

اس کے علاوہ دارالحکومت ڈھاکہ سے بھی ہلاکتوں کی اطلاعات ملی ہیں۔

طوفان سے بڑی تعداد میں مکانات کو نقصان پہنچا، درخت اکھڑ گئے اور بجلی کی فراہمی بھی کئی گھنٹے کے لیے معطل رہی ہے۔

خیال رہے کہ بنگلہ دیش میں موسمِ بہار کے آغاز سے ہی طوفانوں کا سلسلہ شروع ہو جاتا ہے جن میں ماضی میں بھی بھاری جانی نقصان ہوتا رہا ہے۔

اسی بارے میں