پاکستان کے حق میں نعرے بازی پر کشمیری رہنما گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption مسرت بٹ کو سخت گیر رہنما سید علی شاہ گیلانی کا سیاسی جانشین سمجھا جاتا ہے

بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر میں پولیس نے ایک ریلی میں پاکستان کے حق میں نعرے بازی اور پاکستانی پرچم لہرانے کے معاملے میں سخت گیر علیحدگی پسند رہنما مسرت عالم بٹ کو گرفتار کر لیا ہے۔

کشمیر کے آئی جی پولیس نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے گرفتاری کی تصدیق کی اور بتایا کہ انھیں جمعے کی صبح حراست میں لیا گیا ہے۔

آئی جی کے مطابق مسرت عالم کو سنیچر کو عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

پاکستانی پرچم لہرانے کا واقعہ علیحدگی پسند رہنما اور حریت کانفرنس کے ایک دھڑے کے سربراہ سید علی شاہ گیلانی کی کشمیر واپسی کے موقع پر منعقدہ استقبالیہ ریلی میں پیش آیا تھا۔

سری نگر میں منعقدہ ریلی کے شرکا نے نہ صرف پاکستان کے حق میں نعرے بازی کی بلکہ پاکستان کا جھنڈا بھی لہرایا تھا۔

اس ریلی کا انتظام مسرت عالم نے ہی کیا تھا اور اس جلوس کے بعد پولیس نے مسرت عالم اور علی شاہ گیلانی سمیت متعدد افراد کے خلاف ’غیرقانونی اور اشتعال انگیز سرگرمیوں‘ پر مقدمہ درج کیا تھا۔

مسرت بٹ کو سخت گیر رہنما سید علی شاہ گیلانی کا سیاسی جانشین سمجھا جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Haziq Qadri
Image caption پاکستانی پرچم لہرانے کا واقعہ سید علی شاہ گیلانی کی کشمیر واپسی کے موقع پر منعقدہ استقبالیہ ریلی میں پیش آیا تھا

پولیس نے اب اسی مقدمے میں مسرت عالم کو گرفتار کیا ہے جبکہ اطلاعات کے مطابق سید علی شاہ گیلانی کو ترال میں ان کی رہائش گاہ پر نظر بند کیا گیا ہے۔

پولیس حکام کے مطابق ضرورت پڑنے پر انھیں بھی گرفتار کیا جا سکتا ہے۔

ادھر بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں ریلی کے دوران پاکستانی پرچم لہرائے جانے کے واقعے پر پاکستان نے کہا ہے کہ اس سے کشمیریوں اور پاکستان کے درمیان ’گہرے جذباتی تعلق‘ کا پتہ چلتا ہے۔

وزارت خارجہ کی ترجمان تسنيم اسلم نے جمعرات کو ایک پریس کانفرنس میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں کہا کہ ’بھارت کشمیریوں سے یہ مطالبہ نہیں کر سکتا کہ وہ اس کے وفادار رہیں کیونکہ کشمیر ایک متنازع علاقہ ہے جس کا حل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے تحت ابھی تک نہیں نکلا ہے۔‘

علیحدگی پسندوں کی ریلی میں پاکستانی پرچم لہرائے جانے پر بھارت میں بھی سخت رد عمل سامنے آیا ہے۔

مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ بھارتی سرزمین پر ’پاکستان زندہ باد‘ کے نعرے برداشت نہیں کیے جا سکتے جبکہ جموں و کشمیر کے وزیر اعلیٰ مفتی محمد سعید نے کہا ہے کہ قانون اپنا کام کرے گا۔

اسی بارے میں