نیپال: امریکی ہیلی کاپٹر کےملبے سے آٹھ لاشیں نکال لی گئیں

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption تقریباً تین سو امریکی فوجیوں نے نیپال میں امدادی سرگرمیوں میں حصہ لیا جس کے لیے انھوں نے مختلف طیاروں کا بھی استعمال کیا

نیپال میں امدادی سرگرمیوں کے دوران گذشتہ ہفتےگر کر تباہ ہونے والے امریکی فوجی ہیلی کاپٹر پر سوار تمام آٹھ لوگوں کی لاشیں نکال لی گئی ہیں۔

گر کر تباہ ہونے والے ہیلی کاپٹر کا ملبہ جمعہ کو ملا تھا جبکہ حادثے کی وجوہات معلوم کرنے کے لیے تحقیقات جاری ہیں۔

گذشتہ منگل کو چینی سرحد کے قریب امداد پہنچاتے ہوئےگر کر تباہ ہونے والے اس ہیلی کاپٹر میں چھ امریکی اور دو نیپالی فوجی سوار تھے۔

واضح رہے کہ نیپال میں 25 اپریل کو 7.8 شدت کا زلزلہ آیا تھا جس کے نتیجے میں آٹھ ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے تھے۔ جس کے بعد وہاں امدادی کارروائیاں کی جا رہی تھیں۔

ہیلی کاپٹر ایک مقام پر امدادی اشیا پہنچانے کے بعد دوسرے مقام کی جانب جا رہا تھا جب نیپال میں دوسرا زلزلہ آیا۔ جس کے بعد ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تو معلوم ہوا کہ ہیلی کاپٹر لاپتہ ہو چکا ہے۔

منگل کو آنے والے 7.3 شدت کے دوسرے زلزلے میں کم سے کم ایک سو دس افراد ہلاک ہوئے۔

پینٹاگون کے ترجمان سٹیو وارین کا کہنا ہے کہ’ ابھی تک ہیلی کاپٹر کے گرنے کی وجہ تو معلوم نہیں ہو سکی ہے لیکن وہاں قریب ہی موجود بھارتی ہیلی کاپٹر نے ریڈیو پر کچھ باتیں سنی تھیں جن سے معلوم ہوتا ہے کہ شاید ایندھن کا کوئی مسئلہ تھا۔‘

نیپال ٹائمز کے مدیر کنڈا ڈکشٹ نے بتایا ہے کہ ہیلی کاپٹر کا ملبہ کٹھمنڈو سے 56 کلو میٹر دور ایک گھنے جنگل میں ملا ہے۔

تقریباً تین سو امریکی فوجیوں نے نیپال میں امدادی سرگرمیوں میں حصہ لیا جس کے لیے انھوں نے مختلف طیاروں کا بھی استعمال کیا۔

اسی بارے میں