مودی کا فیس بک دورہ، عوام کے سوالات

نریندر مودی تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption نریندر مودی عوام سے رابطے کے لیے سوشل میڈیا کے استمعال کو اہم سمجھتے ہیں

اس ماہ کے آخر میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی سان فرانسسکو جارہے ہیں جہاں وہ فیس بک کے ہیڈکوارٹر کا دورہ کریں گے۔ نریندر مودی کے اس دورے کے بارے میں انڈیا میں سوشل میڈیا پر زبردست جوش دیکھا جا رہا ہے۔

فیس بک کے بانی اور سی ای او مارک زوکربرگ کی جانب سے نریندر مودی کو فیس بک کے ہیڈکوارٹر مدعو کرنے کی خبر کو 6,21000 لوگوں نے لائیک کیا وہیں ایسے 34000 بار شیئر کیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ نریندر مودی کے سرکاری فیس بک صفحے پر اس دعوت کو قبول کرنے کی خبر کو 71,000 لوگوں نے لائیک کیا اور اسے پانچ ہزار سے زیادہ لوگوں نے اپنے صفحے پر شيئر کیا۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی سرکاری ایپ نریندر مودی ایپ کے ذریعے عوام سے کہا کہ وہ اپنے وہ سوال انہیں بھیجیں جو وہ اپنے دورے کے دوران فیس بک کے بانی سے پوچھ سکیں۔

واضح رہے کہ نریندر مودی فیس بک کے ہیڈکوارٹر میں لوگوں سے خطاب کریں گے اور سوال جواب کے سیشن میں حصہ لیں گے۔

جیسے ہی نریندر مودی نے یہ سوال پوچھا لوگوں نے بڑی تعداد میں اپنے سوالات بھیجنے شروع کردیے اور ان میں سب سے اہم سوال یہ تھا کہ کس طرح مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگ معاشی اور سماجی چیلنجز کا سامنا کرنے میں ایک دوسرے کی مدد کرسکتے ہیں؟

لوگوں نے جو سوال بھیجے ان میں سے بعض سوال کچھ یوں ہیں:

1- فیس بک انڈیا میں تعلیم کے شعبے میں ترقی کے لیے کیسے مدد کر سکتا ہے؟

فیس بک کے سی ای او مارک زوکربرگ پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ وہ انڈیا میں تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے کے لیے اقدامات کریں گے۔

2- کینڈی کرش گیم کی ریکویسٹ بہت ہوئی اب؟

انڈیا میں ہرماہ چار کروڑ سات لاکھ لوگ فیس بک کا استمعال کرتے ہیں اور ان میں بیشتر کو مقبول ترین گیم کینڈی کرش کھیلنے کی درخواستیں آتی ہیں۔ بیشتر لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ اس سے تنگ آچکے ہیں اور چاہتے ہیں کہ مارگ زوکربرگ اس بارے میں کچھ کریں۔

3- انڈیا کے لوگوں کو مزید نوکریاں دی جائیں؟

انڈیا کے عوام چاہتے ہیں کہ نریندر مودی جب فیس بک کے ہیڈکوارٹر جائیں تو فیس بک میں بھارتیوں کے لیے مزید نوکریاں دلانے سے متعلق مہم چلائیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption مارک زوکربرگ کا خیال ہے کہ سوشل میڈیا کے استمعال کے اعتبار سے انڈیا ایک اہم مارکیٹ ہے

فیس بک پر ایک صارف وویک سردانہ نے لکھا ہے ’ فیس بک انڈیا میں مزید نوکریاں نکالیں اور انٹرشپ کے مواقع فراہم کیے جائیں۔ پوری دنیا میں انڈیا میں بہترین کمپیوٹر انجینئر موجود ہیں۔ سندر پچائی اور ستیا ندالا جیسے اور بھی بہت لوگ ہیں یہاں۔‘

5- فیس بک بھارتی کسانوں کی مدد کرسکتا ہے؟

انڈیا میں قرض کے بوجھ تلے دبے کسانوں کی خودکشی کی تعداد میں کمی نظر نہیں آتی ہے اور اب وہاں ایک سنگین مسئلہ بن چکا ہے۔ بہت سے صارفین کا خیال ہے کہ سوشل میڈیا اور خاص طور سے فیس بک ان کسانوں کی مدد کرنے میں کلیدی کردار ادا کرسکتا ہے۔

5- کیا مارک زوکربرگ انڈیا کو پیاز بھیج سکتے ہیں؟

انڈیا میں اس وقت پیاز کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں اور لوگوں کا خیال ہے کہ پیاز جیسی بنیادی اشیا کو خریدنے کے لیے دس بار سوچنا پڑتا ہے۔ اس وقت ایک کلو پیاز کی قمیت سو روپے ہے اور بہت سارے صارفین کا خیال ہے کہ مارک زوکربرگ جیسا امیر شخص انڈیا کو پیاز سپلائی کرکے وہاں کے عوام کی زندگی آسان کر سکتا ہے۔

متعلقہ انٹرنیٹ لنکس

بی بی سی بیرونی ویب سائٹس کے مواد کا ذمہ دار نہیں