مالدیپ کے صدر کی کشتی میں دھماکہ، اہلیہ سمیت تین زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption دھماکے کی وجوہات فوری طور پر معلوم نہیں ہو سکی ہیں

مالدیپ کے صدر عبداللہ یامین اپنی کشتی میں ہونے والے دھماکے میں بال بال بچ گئے ہیں تاہم ان کی اہلیہ سمیت تین افراد اس واقعے میں زخمی ہوئے ہیں۔

حکام کے مطابق یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب صدر یامین حج کی ادائیگی کے بعد سعودی عرب سے واپسی پر مالے کے قریب ایک جزیرے پر واقع ہوائی اڈے سے دارالحکومت جا رہے تھے۔

صدر یامین اس واقعے میں محفوظ رہے ہیں تاہم ان کی کابینہ کے وزیر محمد شریف نے بی بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ خاتون اوّل فاطمہ ابراہیم اور دیگر دو افراد زخمی ہوئے ہیں۔

محمد شریف نے بی بی سی کو بتایا کہ دھماکے کی آواز ’کئی سو فٹ دور‘ تک سنی گئی۔

خاتون اوّل کے علاوہ صدر یامین کی حفاظت پر مامور ایک اہلکار اور محمد شریف کے عملے کا ایک رکن اس واقعے میں زخمی ہوئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption خاتون اوّل فاطمہ ابراہیم سمیت زخمیوں کو فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا

دھماکے کی وجوہات فوری طور پر معلوم نہیں ہو سکی ہیں۔

محمد شریف کا کہنا تھا کہ ’مقامی سطح پر تفتیش جا ری ہے لیکن ابھی ہم یقین سے نہیں کہہ سکتے کہ کیا یہ ایک حادثہ تھا یا پھر صدر کی زندگی پر جان بوجھ کرحملہ کیا گیا تھا۔‘

انھوں نے کہا کہ ’(پولیس کی جانب سے) ابھی کسی بھی امکان کو مسترد نہیں کیا گیا ہے۔‘

اسی بارے میں