دہلی کی آلودگی کا حل ’کار فری ڈے‘؟

تصویر کے کاپی رائٹ bbc
Image caption عالمی ادارۂ صحت نے کہا تھا کہ دہلی کی فضا دنیا کے سب سے آبادی والے شہر بیجنگ سے بھی دگنی آلودہ ہے

بھارت کے دارالحکومت دہلی میں سڑک کا کچھ حصہ چند گھنٹوں کے لیے بند کیا گیا تاکہ جمعرات کو ’کار فری ڈے‘ منایا جا سکے۔

لال قلعے سے لے کر انڈیا گیٹ تک چھ کلومیٹر تک کی سڑک بند کر دی گئی اور وہاں صرف سات سے لے کر 12 بجے تک پبلک ٹرانسپورٹ کو گزرنے کی اجازت تھی۔

دہلی کے وزیرِ اعلیٰ اروند کیجریوال نے سائیکل سواروں کے ایک گروہ کی قیادت کرتے ہوئے نقل و حمل کے متبادل ذرائع کو فروغ دیا۔

دہلی کی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ آلودگی کے مسئلے سے نمٹنے کے لیے مہینے میں ایک بار’کار فری ڈے‘ منایا جائے گا۔

مئی سنہ 2014 میں عالمی ادارۂ صحت نے کہا تھا کہ دہلی کی فضا دنیا کے سب سے آبادی والے شہر بیجنگ سے بھی دگنی آلودہ ہے۔

تقریباً 84 لاکھ گاڑیاں ہر روز دہلی کی سڑکوں سے گزرتی ہیں۔

دہلی کے وزیرِ اعلیٰ اروند کیجری وال کا کہنا تھا: ’آلودگی کے خاتمے کے لیے سڑکوں پر بھیڑ کو کم کرنے کی غرض سے ہم سب کو اپنا حصہ ڈالنا ہو گا۔ لوگوں کو ذاتی گاڑیاں چھوڑ کر پبلک ٹرانسپورٹ اور سائیکلوں کا استعمال کرنا چاہیے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption دہلی کے وزیرِ اعلی اروند کیجری والے نے سائیکل سواروں کے ایک گروہ کی قیادت کرتے ہوئے نقل و حمل کے متبادل ذرائع کو فروغ دیا

لیکن سوال یہ ہے کہ محض ایک سڑک بند کر دینے سے یہ اقدام کتنا کارگر ہوا اور وہ بھی ایسے دن جب ہندو تہوار دوشہرے کے باعث سکول، کالج ، کاروبار اور دفاتر پہلے سے ہی بند تھے؟

بی بی سی کے نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اس اقدام کے اثرات اس وقت زیادہ سامنے آئیں گے جو چھٹیوں کے بعد سڑکوں پر گاڑیاں معمول کے مطابق چلیں گی۔

حکومت کا کہنا ہے کہ اس دن کو منانے کے لیے 22 اکتوبر کا دن بہت پہلے چنا گیا تھا اور اس وقت یہ بھی واضح نہیں تھا کہ اس روز دسہرہ ہو گا۔

دہلی پولیس نے بھی اس دن کے انتخاب پر تنقید کرتے ہوئے اسے غیر حقیقی قرار دیا۔

لیکن کئی لوگوں نے اس کی تعریف بھی کی۔

سنیل کمار ایک ماحولیاتی تحفظ کے لیے کام کرنے والے کارکن ہیں اور وہ اس سائیکل ریلی میں شامل تھے۔ وہ کہتے ہیں ’گو کہ یہ چند گھنٹوں کے لیے ہے لیکن یہ ایک اچھا آغاز ہے۔ اس سے لوگوں کو سوچنے کا موقع ملے گا کہ آلودہ ہوا ہماری صحت کے ساتھ کیا کر رہی ہے۔ ‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اندازاً 84 لاکھ گاڑیاں ہر روز دہلی کی سڑکوں سے گزرتی ہیں

اسی بارے میں