’پاکستان نے کچھ قدم اٹھائے ہیں، ہمیں انتظار کرنا چاہیے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان اور بھارت کے خارجہ سیکریٹریوں کے درمیان 15 جنوری کو مذاکرات ہونے ہیں لیکن بھارتی حکومت یہ اعلان کر چکی ہے کہ پٹھان کوٹ پر حملے میں ملوث افراد کے خلاف ٹھوس کارروائی ہونے کی صورت میں ہی یہ بات چیت ہوگی

بھارت کے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہےکہ پاکستان نے پٹھان کوٹ پر حملے میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے اور ’فی الحال اس کے وعدے پر اعتبار نہ کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔‘

وزیرِ داخلہ نے دہلی میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئِے کہا کہ دونوں ملکوں کے خارجہ سیکریٹریوں کے درمیان مجوزہ مذاکرات ہوں گے یا نہیں ’اس بارے میں (فیصلے کا) ابھی آپ انتظار کیجیے، مناسب وقت پر فیصلہ کیا جائے گا۔‘

’جب تک تکلیف نہیں پہنچائیں گے حملے بند نہیں ہوں گے‘

’بھارت کے ساتھ مکمل تعاون کیا جائےگا‘

’پاکستان حملے کی شفاف تحقیقات کر کے حقائق سامنے لائے

ان کا کہنا تھا: ’پاکستان نے موثر کارروائی کرنے کا وعدہ کیا ہے اور میں سمجھتا ہوں کہ اس کا انتظار کرنا چاہیے، کیونکہ پاکستان نے کارروائی کا یقین دلایا ہے، میں سمجھتا ہوں کہ اس کا یقین نہ کرنے کی فی الحال کوئی وجہ نہیں ہے۔‘

راج ناتھ سنگھ نے یہ بھی کہا کہ پاکستان نے ’کچھ قدم اٹھائے ہیں، ہم سبھی کو انتظار کرنا چاہیے۔‘

پاکستان اور بھارت کے خارجہ سیکریٹریوں کے درمیان 15 جنوری کو مذاکرات ہونے ہیں لیکن بھارتی حکومت یہ اعلان کر چکی ہے کہ پٹھان کوٹ پر حملے میں ملوث افراد کے خلاف ٹھوس کارروائی ہونے کی صورت میں ہی یہ بات چیت ہو گی۔

بھارتی وزیر داخلہ کے بیان سے اشارہ ملتا ہے کہ بات چیت منسوخ یا ملتوی کرنے کا ابھی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے اور حکومت بظاہر جلد بازی میں بات چیت کا دروازہ بند نہیں کرنا چاہتی۔

اسی بارے میں