انڈین ریاست راجستھان میں غیر ملکی جوڑے پر حملہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پشکار کا قصبہ غیر ملکی سیاحوں میں بہت مقبول ہے اور یہاں سالانہ ’اونٹ میلہ‘ بھی منعقد ہوتا ہے

انڈیا کی شمالی ریاست راجستھان کی پولیس کا کہنا ہے کہ نشے میں دھت افراد نے ایک غیر ملکی جوڑے کوتشدد کا نشانہ بنایاہے۔

ان غیر ملکی سیاحوں کو پیر کی شام اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ پُشکار کے مقدس شہر میں ایک مندر دیکھنے جا رہے تھے۔

خاتون نے پولیس کو بتایا کہ حملہ آوروں نے ان کے کپڑے پھاڑ ڈالے جبکہ ان کے ساتھی نے جب مزاحمت کی کوشش کی تو ان کو بھی مارا پیٹا۔

پشکار کا قصبہ غیر ملکی سیاحوں میں بہت مقبول ہے اور یہاں سالانہ اونٹ میلہ بھی منعقد ہوتا ہے۔

انڈین ذرائع ابلاغ کے مطابق پشکار تھانے کے سپرنٹینڈنٹ نتندیپ بلگن کا کہنا تھا کہ جن افراد نے اس جوڑے پر حملہ کیا وہ لوگ ’شراب پی رہے‘ تھے۔

’ ان غنڈوں نے خاتون کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے کی کوشش کی اور ان کے کپڑے بھی پھاڑ دیے۔ انھوں نے خاتون کے مرد ساتھی پر شدید تشدد بھی کیا۔‘

انڈین ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ مذکورہ خاتون کا تعلق سپین سے ہے جبکہ ان کے ساتھی سیاح کی قومیت کے بارے میں معلوم نہیں ہو سکا ہے۔

حالیہ عرصے میں انڈیا میں غیر ملکی سیاحوں پر حملوں میں اضافہ ہوا ہے اور کئی واقعات میں خواتین کو ریپ بھی کیا گیا ہے۔

گذشتہ برس کولکتہ میں پانچ افراد کو ایک جاپانی طالبہ کو اغوا کرنے اور اسے کئی مرتبہ ریپ کرنے کے الزام میں گرفتار بھی کیا گیا تھا۔

اس سے قبل جون سنہ 2013 میں ہماچل پردیش میں بھی ایک 30 سالہ امریکی خاتون کو اجتماعی طور پر ریپ کیا گیا تھا۔

اسی بارے میں