نریندر مودی کی تعلیم اور یوم پیدائش پر تنازع

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارتی وزیر اعظم سے ان کی تعلیم اور یوم پیدائش کے بارے میں سوال کیے جا رہے ہیں

انڈیا میں فروغ انسانی وسائل کی وزیر سمرتی ایرانی کی ڈگری کے متعلق جس طرح کا تنازع کھڑا ہوا تھا، اسی طرح کا نیا تنازع اب وزیر اعظم نریندر مودی کی تعلیم اور تاریخ پیدائش کے متعلق سامنے آيا ہے۔

اس سلسلے میں گذشتہ سات برسوں کے دوران بہت سے آر ٹی آئی (رائٹ ٹو انفارمیشن) کارکنوں نے گجرات یونیورسٹی سے معلومات کا مطالبہ کیا تھا لیکن انھیں معلومات نہیں مل پائی تھیں۔

٭ بھارتی وزیرِ تعلیم کی ڈگری کے بارے تحقیقات

جس کے بعد میں مرکزی انفارمیشن کمیشن کی ہدایت پرگجرات یونیورسٹی نے نریندر مودی کی ماسٹرز کی ڈگری کے بارے میں معلومات عام کر دیں لیکن اس کے بعد دو نئے تنازعات کھڑے ہو گئے ہیں۔

اب گجرات کانگریس کی طرف سے یہ سوال پوچھا جا رہا ہے کہ نریندر مودی نے گریجویشن کی ڈگری کہاں سے حاصل کی اور ان کی تاریخ پیدائش کیا ہے؟

تصویر کے کاپی رائٹ Other
Image caption یہ معلومات انڈیا کے الیکشن کمیشن کو فراہم کی گئی ہیں

گجرات کانگریس کے سینیئر لیڈر شکتی سنگھ گوہل نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا: ’کئی سالوں سے گجرات کے آر ٹی آئی کارکن گجرات کے سابق وزیر اعلیٰ اور ملک کے موجودہ وزیر اعظم نریندر مودی کے بارے میں معلومات لینے کے لیے کوشاں رہے ہیں، لیکن ہر بار آر ٹی آئی افسر اسے ذاتی معلومات قرار دے کر ٹالتے رہے ہیں۔‘

گوہل نے کہا: ’مرکزی انفارمیشن کمشنر کے حکم کے بعد گجرات یونیورسٹی نے بتایا کہ نریندر مودی نے سنہ 1983 میں پولیٹیکل سائنس میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کی۔ لیکن مودی نے ماسٹرز میں داخلے کے وقت گریجویشن سرٹیفیکیٹ کس یونیورسٹی کا دیا، یہ نہیں بتایا جا رہا ہے۔

الیکشن کمیشن میں دیے جانے والے حلف نامے کے دستاویزات کے مطابق نریندر مودی نے 1967 میں میٹرک پاس کیا، سنہ 1978 میں دہلی یونیورسٹی سے بی اے پاس کیا اور 1983 میں گجرات سے ماسٹرز۔ لیکن آج تک کسی نے ان کا گریجویٹ سرٹیفیکیٹ نہیں دیکھا اور اس معاملے میں گجرات یونیورسٹی بھی خاموش ہے۔‘

Image caption نریندر مودی کی سکول ليونگ سرٹیفیکیٹ میں یوم پیدائش مختلف ہے

گوہل نے ایک اور مسئلے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ’الیکشن کمیشن کی دستاویز کے مطابق نریندر مودی کی پیدائش 17 ستمبر 1950 میں ہوئی تھی۔ لیکن جہاں سے مودی نے سکول کی تعلیم حاصل کی، گجرات کے اس ويس نگر کے ایم این سکول کے دستاویز کے مطابق مودی کی تاريخ پیدائش 29 اگست 1949 ہے۔

ان دونوں میں سے مودی کی پیدائش کی کون سی تاريخ صحیح ہے، یہ معلومات نریندر مودی کو ہی دینی چاہییں۔‘

گجرات کے آر ٹی آئی کارکن روشن شاہ نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ سنہ 2013 سے ہی نریندر مودی کی تعلیم اور ان کی آمدنی وغیرہ کے متعلق معلومات حاصل کرنے کی درخواستیں دیتے رہے ہیں، لیکن جواب نہیں ملتا۔ انھوں نے کہا کہ گذشتہ سات سالوں میں مودی کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کے لیے گجرات میں 70 سے درخواستیں دے گئیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ modi web site
Image caption دوسری جگہ ان کا یوم پیدائش مختلف ہے

نریندر مودی کی تاریخ پیدائش کے متعلق گجرات کانگریس کے الزامات کو گجرات بی جے پی کے ترجمان بھرت پنڈیا نے سرے سے مسترد کر دیا ہے۔

بی بی سی سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا: ’ہیلی کاپٹر کی خریداری کے متعلق گھپلے میں کانگریس کی رسوائی کے بعد پارٹی ہائی کمان کی طرف سے گجرات کانگریس پر دباؤ ڈالا گیا تھا کہ ہیلی کاپٹر سکینڈل سے لوگوں کی توجہ ہٹانے کے لیے نریندر مودی پر الزام لگائے جائیں اور یہ سب اسی کا نتیجہ ہے۔‘

اس سے قبل انڈیا کے سابق آرمی چیف جنرل وی کے سنگھ کی تاریخ پیدائش کا معاملہ سپریم کورٹ تک پہنچا تھا۔

اسی بارے میں